سوشل میڈیا پرحکومتی پالیسی کی تنقید | رام بن میں ٹیچر معطل، اعلیٰ سطحی انکوائری کمیٹی تشکیل

محمد تسکین
بانہال //چیف سکریٹری کی جانب سے ملازمین کو سوشل میڈیا کے غلط استعمال کے خلاف انتباہ کرنے کے چند دن بعد، رام بن ضلع میں ایک ٹیچر کو فیس بک پوسٹ پر مبینہ طور پر حکومت پر تنقید کرنے پر معطل کر دیا گیا ۔اس سلسلے میں معطلی کا حکم ضلع مجسٹریٹ نے جاری کیا ہے۔حکم نامہ میں کہا گیا ہے کہ ” زیر التواء انکوائری اور سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر اس کے ملازمین کے ذریعہ حکومت کی پالیسیوں پر تنقید کے بارے میں حکومت کی طرف سے دی گئی ہدایات کی خلاف ورزی کے لئے، جوگندر سنگھ، استاد پرائمری سکول چندر کوٹ، کو فوری طور پر معطل کر دیا گیا ہے۔”حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ استاد چیف ایجوکیشن آفیسر (سی ای او) رام بن کے دفتر سے منسلک رہے گا۔ضلع مجسٹریٹ نے معاملے کی جانچ کے لیے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کمشنر رام ن کی سربراہی میں ایک انکوائری کمیٹی تشکیل دینے کا بھی حکم دیا ہے۔کمیٹی کے دیگر ارکان میں چیف ایجوکیشن آفیسر ، زونل ایجوکیشن آفیسر بٹوٹ اور ہیڈ ماسٹر ایچ ایس چندر کوٹ شامل ہیں۔حکم میں کہا گیا ہے کہ “اس طرح تشکیل دی گئی انکوائری کمیٹی گہرائی سے انکوائری شروع کرے گی اور 25 مارچ 2023 تک یا اس سے پہلے مخصوص سفارشات کے ساتھ اس معاملے میں ایک تفصیلی/ جامع رپورٹ پیش کرے گی۔””پتہ چلا ہے کہ مذکورہ استاد نے اپنے فیس بک پیج پر حکومتی پالیسیوں پر تنقید اور منفی تبصرے کرنے والی مختلف پوسٹس کی ہیں۔ اس کے علاوہ، اس نے اپنی شناخت چھپا رکھی اور جعلی فیس بک آئی ڈی بنا رکھی ، جس کا پیشہ سماجی و سیاسی کارکن ہے نہ کہ سرکاری ٹیچر ظاہر کیا گیا‘‘۔ مذکورہ ٹیچر کے نام پر چار فیس بک پیجز چل رہے ہیں اور ان میں سے صرف دو پیجز پر مذکورہ ٹیچر نے اپنا عہدہ ٹیچر اور دیگر میں عہدہ بطور سماجی و سیاسی کارکن لکھا ہے۔