سورج کُنڈ اِنٹرنیشنل کرافٹس میلہ | 20ممالک کی شرکت

ہریانہ//لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے کل شام سورج کنڈ اِنٹرنیشنل کرافٹس میلہ فرید آباد کا دورہ کیا۔جموںوکشمیر کاریگروں، ہینڈی کرافٹس اینڈ ہینڈ لومز کو فروغ دینے کے لئے دنیا کے سب سے بڑے میلے کا مرکزی خیال ریاست/ یوٹی ہے، جس میں تقریباً 20 ممالک حصہ لے رہے ہیں۔اِس موقعہ پر لیفٹیننٹ گورنر نے میلے سے وابستہ ہر فرد کی جانب سے کی جانے والی مخلصانہ کوششوں کی تعریف کی اور ملک بھر کے مختلف خطوں کو ان کے دستکاری ، ثقافت ، ضیافتیں ، ورثے اور لوگوں کی نمائش کے لئے ایک مشترکہ پلیٹ فارم فراہم کرنا ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے ہینڈی کرافٹ، ہینڈ لوم شعبے کو فروغ دینے کے علاوہ مقامی دستکاروں کو قومی اور عالمی منڈیوں میں پلیٹ فارم فراہم کرنے کے لئے یوٹی حکومت کی کوششوں پر روشنی ڈالی۔اُنہوں نے کہا کہ جموں کشمیر حکومت نے روایتی طور پر بنی ہاتھ سے بنی مصنوعات کی مارکیٹ کو وسعت دینے، روز گار کے مواقع کو بڑھانے اور کاریگروں کی خاطر سماجی تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے مربوط دستکاری کی ترقی اورایکسپورٹ پروموشن سکیم کے تحت متعدد نئے اقدامات کئے ہیں۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ جموںوکشمیر کا منفرد ثقافتی اور فنکارانہ ورثہ اور انمول دستکاری ، ہینڈلومز نے دُنیا بھر میں تعریف کی ہے۔اُنہوں نے مزید کہا ،’’ ہمارا مقصد نوجوان نسل کو دستکاری کی روایت سے جوڑنا اور انہیں تربیت ، ڈیزائن ، مالی امداد اور اِس طرح کی دیگر بنیادیڈھانچہ جاتی مدد فراہم کرنا ہے جو اس کی ترقی کے لئے ضروری ہے۔ ‘‘لیفٹیننٹ گورنر یہ جان کر خوشی ہوئی کہ جموںوکشمیر ایک پارٹنر ملک ازبکستا ن کے ساتھ 22برس کے وقفے کے بعد تھیم پارٹنر ہے۔اُنہوں نے کہا کہ مجھے اُمید ہے کہ جموں و کشمیر کی شاندار دستکاری کی روایت اور مختلف اقوام، ریاستوں، ثقافتوں اور کاریگروں کے درمیان باہمی افہام و تفہیم کو اس طرح کے اقدامات سے مزید گہرا کیا جائے گا۔اِس موقعہ پر لیفٹیننٹ گورنر نے جموں و کشمیر یوٹی کے کاریگروں سے بات چیت کی اور عالمی وبائی امراض کی وجہ سے متاثر ہونے والے کاریگروں کو ہر ممکن مدد فراہم کرنے کے لئے حکومت کے عزم کا اعادہ کیا۔لیفٹیننٹ گورنر نے اپنا گھر میں بھی کچھ وقت گزارا اور وہ اس بات پر خوش اور متاثر ہوئے کہ جموں و کشمیر حکومت نے بہت کم وقت میں سورج کنڈ کے میلہ گراؤنڈ پر جموں و کشمیر کے شاندار ورثے کی عکاسی کرتے ہوئے کچھ قابل ذکر ڈھانچے بنائے ہیں۔انہوں نے ایک ثقافتی پروگرام، فیشن شو اور جموں و کشمیر کے کپڑے پر ایک مختصر دستاویزی فلم بھی دیکھی۔ ہینڈلوم اینڈ ہینڈی کرافٹس ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے مرکزی چوپال کے علاقے میں ایک عظیم الشان فیشن شو کا انعقاد کیا گیا۔واضح رہے کہ جموںوکشمیر کے کاریگروں کے لئے تقریباً 60 سٹال مفت مختص کئے گئے ہیں۔ گذشتہ دس دنوں کے دوران تقریباً 5 لاکھ لوگ میلے کا دورہ کر چکے ہیں۔