سنٹرل یونیورسٹی میں فن اور دستکاری کا مقابلہ

سرینگر//سرد موسم میں کڑاکے کی سردی کے باوجود شعبہ اسکول آف ایجوکیشن کے زیر اہتمام سنٹرل یونیورسٹی کشمیر نے جموں و کشمیر بھر کے ایس ای ڈی جی سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں طلاب کو تعلیم اور اساتذہ کی فراہمی کے ذریعے اپنی سماجی وابستگی کو پورا کررہا ہے۔اسی سلسلے کے تحت گورنمنٹ سیکنڈری اسکول نٹی پورہ سرینگر کے تعاون سے یونیورسٹی کے زیر اہتمام قائم کیمپ میں چھٹی، ساتویں اور آٹھویں جماعت کے طلباء کے لئے فن اور دستکاری مقابلے کا انعقاد کیا گیا جس کی نگرانی شعبہ اسکول آف ایجوکیشن کے سربراہ ڈاکٹر سید ظہور احمد گیلانی نے کی۔سنٹرل یونیورسٹی کشمیر کے وائس چانسلر پروفیسر معراج الدین میر جنہوں نے اس موقع پر ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ شرکت کرتے ہوئے محکمہ کی کاوشوں کو سراہا اور اس پروگرام کو منظم کرنے والے ماہرانہ اساتذہ کی تعریف کی۔وائس چانسلر نے یقین دلایا کہ نئی قومی تعلیمی پالیسی 2020 میں جیسا کہ سمجھا گیا ہے کہ نچلی سطح پر اس برادری کی خدمت جاری رکھی جائے گی۔ اس موقع پر رجسٹرار پروفیسر ایم افضل زرگر نے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے تمام طلبہ کو سخت سردی کے باوجود اس مقابلے میں حصہ لینے پر مبارکباد پیش کی۔مقابلہ میں تمام شرکا ء کو انعامات دئے گئے۔ ارباز احمد کو فٹ بال میدان بنانے کے لئے مقابلے کا مجموعی طور پر فاتح قرار دیا گیا۔آٹھویں جماعت کے طلباء میں یکم ، دوم اور تیسرے انعامات بالترتیب عرفان احمد ، بومیکا اختر اور نہال نے حاصل کئے جبکہ ساتویں جماعت کے طلباء میں اول اور دوم انعام ثانیہ اختر ، سیرت جان اور چھٹویں جماعت کے طلباء میں حاصل کیا گیا۔پہلا اور دوسرا انعام بالترتیب سبرینہ اختر اور ایمن جان نے حاصل کیا ۔اس پروگرام کا اہتمام منزہ منظور کی سربراہی میں کیا گیا تھا۔اس موقع پر شعبہ اسکول ایجوکیشن کے سربراہ ڈاکٹر سید ظہور احمد گیلانی نے بھی طلباء  سے بات چیت کی اور ان کو محنت ، وقار اور وقت کی اہمیت پر زور دیا۔