سنجوان جموں میں مسلح تصادم: ایک فوجی اہلکار ہلاک،4دیگر زخمی

نیوز ڈیسک
 

جموں//جموں ضلع کے جلال آباد سنجوان علاقے میں جمعہ کو عسکریت پسندوں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان ہوئے ایک تصادم میں ایک فوجی اہلکار ہلاک ہوا ہے، جبکہ دیگر 4زخمی ہیں ۔

 

اطلاعات کے مطابق فائرنگ کا تبادلہ جاری ہے اور خیال ہے کہ دو عسکریت پسند محاصرے میں ہیں۔

 

سنجوان کے علاقے میں سیکورٹی فورسز کی جانب سے ایک خاص اطلاع ملنے کے بعد آپریشن شروع کیا گیا۔

 

تفصیلات کے مطابق جوں ہی فورسز مشتبہ مقام پر پہنچیں تو چھپے ہوئے عسکریت پسندوں نے ان پر فائرنگ کر دی، جس سے تصادم کا آغاز ہوا۔ 

 

پولیس کا کہنا ہے کہ تصادم میں اب تک ایک فوجی اہلکار ہلاک اور 4 دیگر زخمی ہو گئے ہیں اور ملی ٹینٹوں کا ایک گھر میں چھپے ہونے کا خدشہ ہے۔ 

 

یاد رہے کہ سنجوان میں فوجی کیمپ پر 2018 میں عسکریت پسندوں نے حملہ کیا تھا، جس میں چار حملہ آوروں کے علاوہ پانچ فوجی اور ایک شہری ہلاک ہو گئے تھے۔

 

ایک اہلکار نے گریٹر کشمیر کو بتایا کہ سیکورٹی فورسز پہلے سے ہی ہائی الرٹ پر تھیں کیونکہ انہیں عسکریت پسندوں کی موجودگی کے بارے میں اطلاعات تھیں۔

 

انہوں نے کہا کہ ان پٹ کے پیش نظر 21 اپریل سے بھٹنڈی-سنجوان روڈ پر گاڑیوں کی چیکنگ تیز کر دی گئی ہے۔

 

واضح رہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی 24 اپریل کو جموں کا دورہ کرنے والے ہیں۔