سنتھن و مرگن شاہرائیں مسلسل بند ،فوری بحالی کا مطالبہ

کشتواڑ//سنتھن کشتواڑ قومی شاہراہ و مرگن انشن متی گاورن سڑک تیسرے روز بھی آمدورفت کیلئے بند رہی جسکے سبب عوام کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ دونوں سڑکوں پر برف ہٹانے کا کام ابھی تک شروع نہ ہوسکا۔نیشنل ہائی وے اتھارٹی کے افسر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ امسال سڑک پر برف ہٹانے کا کام اننت ناگ حکام کو دیا گیا ہے جبکہ انھیں اس متعلق مزید کوئی علمیت نہیں ہے۔مڑواہ و واڑون کی عوام نے  گاورن مرگن انشن سڑک پر جلد برف ہٹانے کا مطالبہ کیا ہے ۔انھوں نے بتایا کہ سینکڑوں کی تعداد میں لوگ کشتواڑ ، سرینگر و جموں میں درماندہ ہوکر رہ گئے ہیں جبکہ کئی مسافر انشن و نواپچی میں پھنسے ہوئے ہیں اور انھیں جلد ازجلد اپنے مقامات پر پہنچایاجاناچاہئے۔ انشن کے مقامی نوجوان وقار احمد نے بتایا کہ مرگن سڑک سرما میں آمدورفت کیلئے بند رہتی ہے جبکہ اس سے قبل لوگ ضروری اشیا کا سامان گھروں میں لاکر رکھتے ہیں لیکن امسال وقت سے قبل برفباری نے انکی مشکلات میں مزید اضافہ کیا اور اگر سڑک کو دوبارہ آمدورفت کیلئے نہ کھولا گیا تو یہاں کی عوام فاکہ کشی پر مجبور ہوگی۔انھوں نے انتظامیہ سے جلد از جلد سڑک کو بحال کرنے کا مطالبہ کیا تاکہ لوگ سازو سامان لاسکیں۔کشتواڑ کی عوام نے بھی ضلع انتظامیہ سے کشتواڑ سنتھن شاہروہ کو دوبارہ کھولنے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ عوام کی مشکلات میں کمی ہوسکے۔واضح رہے کہ امسال وقت سے قبل ہوئی بھاری برفباری نے سڑک کو دوماہ قبل ہی بند کردیا جبکہ گزشتہ سال نومبر کے آخر تک سنتھن کشتواڑ شاہراہ پر آمدورفت جاری تھی جبکہ گاورن مرگن انشن سڑک پر بھی نومبر کے آخر تک گاڑیوں کی آواجاہی جاری رہی تھی۔