سموٹ بدھل میں بجلی کی تاریں زندگیوں کیلئے خطرہ سبز درختوں و لکڑی کے کھمبوں کے بغیر لائنیں مکمل نہیں ،صارفین پریشان

سید زاہد
بدھل//کوٹرنکہ سب ڈویژن بالخصوص بدھل کے اکثر و بیشتر علاقوں میں بجلی کا ترسیلی نظام سبز درختوں اور لکڑی کے کھمبوں کے بغیر ناممکن دیکھائی دے رہا ہے جبکہ محکمہ کی لاپرواہی اور غیر سنجیدگی کی وجہ سے مذکورہ خستہ حال ترسیلی نظام اب عام زندگیوں کیلئے بڑا خطرہ بنتا جارہا ہے ۔مقامی معززین نے بتایا کہ بدھل کے سموٹ علاقہ میں محکمہ کی غفلت شعاری کا اندازہ اس دلیل سے لگایا جاسکتا ہے کہ ترسیلی لائنیں سبز درختوں کیلئے آیزاں ہونے کے بغیر صارفین کے گھروں تک بجلی کی رسائی ممکن نہیں ۔سموٹ پنچایت کی وارڈ نمبر 2 کے رہائشی محمد شفیع نامی ایک شخص نے بتایا کہ پچھلے دو سالوں سے محکمہ پی ڈی ڈی کے ایکس ای این کے آفس میں ہر ہفتے چکر لگانے کے بعد بھی متعلقہ آفیسر عوامی مانگ و مشکلات کو حل کرنے میں مبینہ طورپر کوئی توجہ نہیں دے رہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ بجلی کے ماہانہ بھاری بل ادا کرنے کے بعد بھی صارفین کو معیاری سہولیات فراہم نہیں کی جارہی ہیں ۔مکینوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ وہ متعلقہ محکمہ کے دفاتر کی دہلیز تک چکر کاٹ کر تنگ آچکے ہیں لیکن دیہات میں محکمہ کی جانب سے نہ تو پختہ کھمبے لگائے جارہے ہیں اور نہ ہی ان کو بنیادی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں ۔محمد شفیع نے بتایا کہ اس سلسلہ میں اے ڈی سی کوٹرنکہ اور متعلقہ تحصیلدار کے دفتر کے چکر بھی کاٹ چکے ہیں لیکن ابھی تک جھوٹی یقین دہانیوں کے بغیر کوئی عملی کام نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے عوامی پریشانیاں جوں کی توں ہی ہیں ۔مقامی لوگوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ بجلی کی لاپرواہی کا سنجیدہ نوٹس لیا جائے اور دیہات میں پختہ کھمبے لگاکر صارفین کو بنیادی سہولیات فراہم کی جائیں ۔