سمبڑ بانہال میں نیشنل کانفرنس کی ریلی

بانہال // حلقہ انتخاب بانہال کے دور افتادہ علاقہ سمبڑمیں نیشنل کانفرنس کی جانب سے ایک ریلی کا اہتمام کیاگیا۔ اس موقع پر پی ڈی پی اور کانگریس کے درجنوں ورکروںنے نیشنل کانفرنس میں شمولیت اختیار کرلی جن میں کانگریس سے وابستہ ایک سرپنچ توشا سنگھ بھی شامل ہے۔  اپنے خطاب میں نیشنل کانفرنس ضلع صدر رام بن سجاد شاہین نے کہا کہ علاقہ سمبڑ شروع سے ہی نیشنل کانفرنس کا گڑھ رہا ہے اور یہاں اب تک جو بھی تعمیر وترقی ہوئی ہے وہ نیشنل کانفرنس کے دور اقتدار میں ہی ہوئی ہے۔ انہوں نے سمبڑ کی دو دراز کی آبادی کو تعمیر و ترقی کے میدان میں نظر انداز کئے جانے پر پی ڈی پی کی قیادت والی مخلوط سرکار اور ممبر اسمبلی بانہال کی سخت الفاظ میں نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ خود کو تعمیر ترقی کے بادشاہ کہنے والے عوامی نمائندے کو سمبڑ کی کسمپرسی اور بدحالی کا جائزہ لینا چاہئے جہاں لوگ ابھی تک بنیادی سہولیات سے محروم مشکلات بھری زندگی جی رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حلقہ انتخاب بانہال کے شہر و گام میں تعمیر وترقی کا نام و نشان نہیں ہے اور اگر موجودہ دور میں کسی قسم کی تعمیر وترقی ہوئی ہے تو وہ کانگریس کے ورکروں اور رشتہ داروں کی ہوئی ہے۔ انہوں نے کانگریس ، پی ڈی پی اور بھارتیہ جنتا پارٹی سے نکل کر جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس میں شامل ہونے پر سرپنچ توشا سنگھ سمیت تمام افراد کا شکریہ ادا کیا اور انہیں یقین دلایا کہ وہ سب ملکر نیشنل کانفرنس کے عوام دوست منشور اور  پالسیوں کو گھر گھر پہنچا کر اس پارٹی کو مزید مضبوط اور مستحکم کرنے کا سلسلہ آگے بھی جاری رکھیں گے۔ اس موقع پر جنہوں نے وہاں موجود عوامی جلسے سے خطاب کیا ان میں بلاک صدر کھڑی سمبڑ محمد خلیل سوہل ، بلاک صدر پوگل پرستان ریاض احمد میر، پیر حاجی اسداللہ شاہ ، پیر حاجی شاہ حسین ، سابقہ سرپنچ ٹھاکر مولا رام ، جسونت سنگھ ، محمد اشرف چوپان ، حاجی بشیر احمد ، حاجی محمد یعقوب ، عبدالقیوم مغل ، یوتھ لیڈر عاشق علی ، فرید احمد ، سمرن سنگھ ،پنچ محمد اقبال اور دیگران شامل تھے۔