سفارتکاروں کو جاسوس قرار دینے کا جواب دینگے:روس

 اقوام متحدہ// روس کا کہنا ہے کہ برطانیہ کی جانب سے روسی سفارت کاروں کو جاسوس قرار دینے اور ملک بدری کا جلد جواب دیا جائے گا، امریکہ نے سلامتی کونسل سے روس کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کردیا۔سلامتی کونسل کے ہنگامی اجلاس میں برطانوی سفیر نے الزام عائد کیا کہ اعصابی گیس کا حملہ ریاستی پشت پناہی میں کیا گیا۔امریکی سفیر نکی ہیلی بولیں روس کو اپنے اعمال کا حساب دینا ہوگا۔ الزامات مسترد کرتے ہوئے روسی سفیر کا کہنا تھاکہ اشتعال انگیز حملہ الیکشن سے پہلے روس کی ساکھ متاثر کرنے کے لیے کیا گیا، برطانیہ کیمیائی مادہ روس کو فراہم کرے ۔دریں اثنا برطانیہ کی جانب سے سفارتکاروں کی برطرفی کی کارروائی پر روسی وزیر خارجہ کو برطانیہ کا دورہ کرنے کی دعوت واپس لینے کے حوالہ سے روسی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریا نے اپنے فیس بک پیج پر لکھا ہے '' مئے نے لاؤوروف کو برطانیہ کا دورہ کرنے کی دعوت واپس لے لی ہے ۔ لیکن انھوں (لاؤورف) نے یہ دعوت قبول ہی نہیں کی تھی۔''روس نے برطانوی اقدام کی مذمت کی ہے ۔ لندن میں واقع روسی سفارتخانے نے ایک بیان میں برطانیہ کے اعلان کو جارحانہ، ناقابل قبول، بلا جواز قرار دیا ہے ۔''دونوں ممالک کے درمیان تعلقات خراب ہونے کی ذمہ داری برطانوی رہنماؤں پر ہیں۔''یو این آئی