سطح کی ایم ایم اے کڈوچمپئن شپ اختتام پذیرUT

جموں//سابق ایم ایل اے اور بی جے پی لیڈر دیویندر سنگھ رانا نے کڈو کھیل میں باصلاحیت کھلاڑیوں کی بڑھتی ہوئی شرکت پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کڈو نوجوان نسل کو توجہ مرکوز رکھنے، فٹ اور ذہنی طور پر چست رہنے میں مدد دیتا ہے،۔رانا نے ماو¿نٹ لیٹرا زی اسکول بوڑی جموں میںجموں و کشمیر کی کڈو ایسوسی ایشن کی طرف سے منعقدہ تیسری UT سطح کی MMA چمپئن شپ کے اختتامی تقریب میں کہا "یہ ایک زندگی بھر کا کھیل ہے، نوجوانوں کی تعلیم کا نظام، اپنے دفاع کا طریقہ اور بالغوں کے لیے صحت کی دیکھ بھال ہے" ۔انہوں نے کہا کہ ان عناصر کے ساتھ یہ اپنی روایت میں "ریگی" یا احترام اور آداب پر زور دیتا ہے۔دیویندر رانا، جو اس تقریب کے مہمان خصوصی تھے، نے کہا کہ کڈو کھلاڑی کو اس سطح پر لے جاتے ہیں جہاں وہ زندگی میں جو چاہیں حاصل کر سکتے ہیں۔ اس کھیل کا انتخاب کسی بھی شعبے سے کوئی بھی شخص کر سکتا ہے۔انہوںنے جموں و کشمیر کی کڈو ایسوسی ایشن کی تعریف کی کہ وہ جموں و کشمیر کو اس کھیل کی تکنیکوں کو سیکھنے اور اس میں مہارت حاصل کرنے کے لیے بہترین جگہ بنانے کے لیے تمام ذمہ داری اپنے کندھوں پر لے رہی ہے۔صدر کڈو ایسوسی ایشن جموں و کشمیر رینشی فیصل نذیر نے اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ جیسے جیسے کڈو مکسڈ مارشل آرٹ زیادہ سے زیادہ مرکزی دھارے میں شامل ہوتا جا رہا ہے اور زیادہ مقبول ہوتا جا رہا ہے، یہ مارشل آرٹس کے کڈو اسپرٹ سے دور اور دور ہوتا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ کڈو ایونٹس کے انعقاد کا بنیادی مقصد جموں و کشمیر میں کھیلوں کو فروغ دینا ہے تاکہ نوجوانوں کو منشیات اور تناو¿ کی لعنت سے بچایا جا سکے۔ انہوں نے مشاہدہ کیا کہ جموں و کشمیر کے لوگ لڑائی کے تماشوں کو پسند کریں گے اور اصلی کوڈو مارشل آرٹس کی تربیت کے گہرے معنی کو سمجھیں گے۔گلشن رتن کے صدر کڈو ایسوسی ایشن صوبہ جموں نے کہا کہ اب ہمارے پاس کتابوں، ڈی وی ڈی اور ویب پر بہت زیادہ معلومات دستیاب ہیں۔