سر زمین ِ کشمیر سے سب کو مبارکباد پی ایم مودی کی یوگا کے 10ویں عالمی دن پر سرینگر میں شرکت

  عظمیٰ نیوز سروس

سرینگر// وزیر اعظم نریندر مودی نے یوگا کے 10ویں عالمی دن کے موقع پر ملک کے تمام لوگوں اور دنیا کے کونے کونے میں یوگا کرنے والوں کو مبارکباد دی اور کہا کہ گزشتہ 10 سال سے دنیا یوگا کی نئی معیشت کو آگے بڑھتے ہوئے دیکھ رہی ہے۔پی ایم مودی نے جمعہ کو یوگا کے بین الاقوامی دن کے موقع پر سرینگر کے شیر کشمیر انٹرنیشنل کانفرنس سینٹر (SKICC) میں یوگا کیا۔سرینگر میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ اقوام متحدہ میں بین الاقوامی یوگا ڈے منانے کے حوالے سے ہندوستان کی تجویز کی 177 ممالک نے حمایت کی۔وزیر اعظم نے کہا”آج، سرزمین کشمیر کی طرف سے، میں دنیا بھر کے سبھی کو یوگا کے عالمی دن پر مبارکباد دیتا ہوں، دس سال پہلے، میں نے اقوام متحدہ میں یوگا کا عالمی دن منانے کی تجویز پیش کی تھی، ہندوستان کی تجویز کو 177 ممالک نے سپورٹ کیا جو اپنے آپ میں ایک ریکارڈ ہے۔ 2015 میں، دہلی میں کرتاویہ پتھ پر، 35,000 لوگوں نے ایک ساتھ یوگاسن کا مظاہرہ کیا‘‘۔وزیر اعظم نے کہا”بین الاقوامی یوگا ڈے پر، مجھے یوگا اور سرزمین کشمیر آنے کا اعزاز حاصل ہوا ہے،سرینگر میں، ہم اس طاقت کو محسوس کر رہے ہیں جو یوگا ہمیں دیتا ہے، میں کشمیر کی سرزمین سے ملک کے تمام لوگوں اور دنیا کے کونے کونے میں یوگا کرنے والوں کو بین الاقوامی یوگا ڈے پر مبارکباد دیتا ہوں‘‘۔

 

انہوں نے کہا کہ پچھلے 10 سالوں میں یوگا کے پھیلا نے یوگا سے متعلق تاثر کو بدل دیا ہے اور مزید کہا کہ دنیا یوگا کی نئی معیشت کو آگے بڑھتے ہوئے دیکھ رہی ہے۔ پی ایم مودی نے کہا”گزشتہ 10 سالوں میں، یوگا کے پھیلا نے یوگا سے متعلق تاثر کو بدل دیا ہے، آج دنیا یوگا کی نئی معیشت کو آگے بڑھتے ہوئے دیکھ رہی ہے، رشیکیش اور کاشی سے لے کر کیرالہ تک، ہم ہندوستان میں ابھرتے ہوئے یوگا ٹورازم کے ایک نئے رجحان کا مشاہدہ کر سکتے ہیں‘‘۔انہوں نے کہا’’ دنیا بھر سے لوگ مستند یوگا سیکھنے کی جستجو میں ہندوستان آ رہے ہیں، اسی مناسبت سے مہمان نوازی، سیاحت، ملبوسات وغیرہ سے متعلق شعبے لوگوں کی بڑی آمد سے عروج پر ہیں۔ اس سے نوجوانوں کے لیے روزگار کے نئے مواقع پیدا ہو رہے ہیں‘‘۔وزیر اعظم نے کہا کہ پوری دنیا میں یوگا کرنے والوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔انہوں نے کہا”اس سال ہندوستان میں، فرانس کی ایک 101 سالہ خاتون یوگا انسٹرکٹر کو پدم شری سے نوازا گیا، بھارت کا کبھی دورہ نہ کرنے کے باوجود، اس نے اپنی پوری زندگی یوگا کے بارے میں بیداری کو فروغ دینے کے لیے وقف کر دی، فی الحال، دنیا بھر کی معزز یونیورسٹیاں اور ادارے یوگا پر تحقیق کر رہے ہیں، جس کے نتیجے میں تحقیقی مقالے شائع ہو رہے ہیں،” ۔پوری دنیا میں یوگا کے سفر پر روشنی ڈالتے ہوئے پی ایم مودی نے کہا کہ ہندوستان میں محکمہ آیوش نے یوگا پریکٹیشنرز کے لیے یوگا سرٹیفیکیشن بورڈ بھی تشکیل دیا ہے۔انہوں نے کہا”پچھلے سال، مجھے یوگا ڈے پروگرام کی صدارت کرنے کا موقع ملا جو یو ایس اے میں اقوام متحدہ کے ہیڈکوارٹر میں ہے‘‘۔ انہوں نے کہاکہ بھارت میں، محکمہ آیوش نے یوگا پریکٹیشنرز کے لیے یوگا سرٹیفیکیشن بورڈ تشکیل دیا ہے۔ ہندوستان کے 100 سے زیادہ بڑے اداروں اور بیرون ملک سے 10 اداروں کو اس بورڈ سے سرٹیفیکیشن دیے گئے ہیں۔وزیر اعظم نے مزید کہاکہ2015 میں، میں نے ترکمانستان میں یوگا سینٹر کا افتتاح کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ پورے جموں و کشمیر میں یوگا کی طرف کشش مرکز کے زیر انتظام علاقے کی سیاحت کو ایک نئی تحریک دینے کا موقع بن گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ “یوگا کی طرف کشش جو پورے جموں و کشمیر میں پیدا ہوئی ہے، جو جوش اور ولولہ جس کے ساتھ لوگ یوگا سے جڑنے کے لیے بے تاب ہیں، جموں و کشمیر کی سیاحت کو ایک نئی تحریک دینے کا موقع بن گیا ہے۔”2015 سے، وزیر اعظم نے مختلف مشہور مقامات پر یوگا کے بین الاقوامی دن (IDY) کی تقریبات کی قیادت کی ہے۔