سری لنکاٹیم آج اپنی آخری اُمید لیکراُتریگی ویسٹ انڈیز کے خلاف

چیسٹر لی اسٹریٹ/ آئی سی سی ورلڈ کپ میں کسی کرشمہ کی منتظر سری لنکا کی ٹیم پیر کو مقابلہ سے باہر ہو چکی ویسٹ انڈیز کے خلاف اپنی آخری بچی کھچی توقعات کے لیے اترے گی۔سری لنکا کو گزشتہ میچ میں جنوبی افریقہ کے خلاف نو وکٹ سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا جس سے اسے گہرا جھٹکا لگا ہے اور اب اس کے لئے سیمی فائنل میں جگہ بنانے کی راہ تقریبا بند ہو چکی ہے ، لیکن باقی دونوں میچوں میں فتح اور دیگر ٹیموں کے نتائج کے مطابق فی الحال مقابلے سے باہر نہیں سمجھا جا سکتا ہے ۔سری لنکا کی ٹیم نے سات میچوں میں دو جیتے ہیں اور تین ہارے ہیں جبکہ دو میچ منسوخ رہے تھے جس کے بعد وہ ٹیبل میں چھ پوائنٹس لے کر ساتویں نمبر پر ہے ۔ ٹیبل میں آسٹریلیا کے سیمی فائنل میں جگہ پکی کرنے کے بعد فی الحال تین مقامات پر ہندستان ، نیوزی لینڈ اور پاکستان ہیں لیکن چوتھے نمبر کو لے کر ابھی پوزیشن صاف نہیں ہے جس پر کئی ٹیموں کے درمیان مقابلہ چل رہا ہے ۔دوسری طرف ونڈیز کی ٹیم مقابلے سے پہلے ہی باہر ہوچکی ہے اور اس کے پاس کھونے کے لیے کچھ نہیں ہے ، لیکن وہ سری لنکا کے لئے کرو یا مرو کے مقابلے میں اسے ضرور باہر پہنچا سکتی ہے ۔ ونڈیز کو اپنے آخری میچ میں ہندستان کے ہاتھوں 125 رنز سے یکطرفہ شکست کھانی پڑی تھی جبکہ انگلینڈ کو 20 رنز سے ہرا کر میزبان ٹیم کے جوڑ توڑ بگاڑنے والی سری لنکا کی ٹیم اپنے آخری میچ میں افریقی ٹیم سے یکطرفہ انداز میں ہار گئی جو مایوس کن کارکردگی کے بعد ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئی ہے ۔دمتھ کرونارتنے کی ٹیم کی کارکردگی میں تسلسل کا فقدان ہے ، خاص طور پر ٹیم کے بلے باز بڑے اسکور اور اہم مواقع پر شراکت کر پانے کے اہل نہیں ہیں۔ ونڈیز ٹیم کے ماہر گیند بازوں کے سامنے کپتان کی کوشش بلے بازی میں سدھار پر ہوگی۔ کوشل پریرا گزشتہ پانچ میچوں میں 38.2 کی اوسط سے 191 رنز بنا کر ٹیم کے ٹاپ اسکورر ہیں جس میں دو نصف سنچری شامل ہیں۔ٹیم میں صرف تین ہی بلے باز ہیں جنہوں نے اس عالمی کپ میں نصف سنچری بنائی ہیں اس میں کپتان کرونارتنے دوسرے بلے باز ہیں جو دو نصف سنچریوں کے ساتھ 180 رنز بنا کر دوسرے ٹاپ اسکورر ہیں۔ اس کے علاوہ تجربہ کار انجیلو میتھیوز اور مینڈس ہیں۔ گزشتہ میچ میں ٹیم کے لئے پریرا اور فرنانڈو کی 30-30 رنز کی اننگز سب سے بڑا اسکور رہا تھا۔ اگر سری لنکا کو اپنی آخری امید برقرار رکھنی ہے تو یقینا بلے بازی میں بڑے پیمانے پر سدھار کرنا ہوگا۔تجربہ کار فاسٹ بولر لست ملنگا نے اب تک کافی متاثر کیا ہے اور ان پر مشکل حالات کو سنبھالنے کا کافی دباؤ لگتا ہے ۔ پانچ میچوں میں انہوں نے نو وکٹ حاصل کئے ہیں۔