سرینگر کنگن شاہراہ پر ٹریفک جام سے نجات ملنے کا امکان | نالہ سندھ پر زیر تعمیر پل جون 2022میں عوام کے نام وقف ہو گا

گاندربل//ورلڈ بینک کے 23 کروڑ کے مالی تعاون سے سرینگر کنگن شاہراہ پر نالہ سندھ کے مقام پر زیر تعمیر نیا پل رواں سال جون کے مہینے میں عوام کے نام وقف کردیا جائے گا جس کے سبب کنگن اور اس سے ملحقہ علاقوں میں رہائش پذیر ہزاروں کی آبادی راحت کی سانس لے گی۔کنگن شاہراہ پر نالہ سندھ پر وائل کے مقام پر لوہے کا بنا ہوا پل یکطرفہ ہونے کے سبب ہزاروں افراد پر مشتمل آبادی کیلئے سوہان روح بنا ہوا ہے۔ ہر روز گھنٹوں ٹریفک کی نقل و حرکت بند ہوجاتی ہے۔ستمبر1992 میں نالہ سندھ میں سیلاب آنے کے نتیجے میں وائل کے مقام پر لکڑی کا بنا ہوا پل پانی کے تیز بہاو میں بہہ گیا جس کے باعث تین ماہ تک گاڑیوں کی آمدورفت بند ہوگئی۔بیکن اور فوج کی مدد سے تین ماہ کے اندر اندر آمدورفت کے لئے لوہے کا پل بنادیا گیا تاہم صرف دو سال کے بعد ہی سال1994کے اگست کے مہینے میں دوسری مرتبہ زبردست سیلاب آنے سے لوہے کا بنا ہوا پل بھی پانی کے تیز بہاو میں بہہ گیا۔اس مرتبہ پل کی تعمیر میں ایک سال کا عرصہ لگ گیااور بالآخر 1995 میں بیکن اور فوج کی جانب سے لوہے کا دوسرا پل بنا دیا گیا جس پر پچھلے 18 سالوں سے گاندربل اور کنگن کے درمیان یکطرفہ ٹریفک جاری ہے۔گزشتہ 18 سالوں کے دوران ضلع گاندربل میں کئی بڑے اور اہم پل تعمیر کئے گئے لیکن بدقسمتی سے وائل کے مقام پر پل تعمیر نہیں کیا جاسکا جس کے سبب منی گام،یارمقام ،اندرون علاقوں سمیت کنگن اور اس سے ملحقہ درجنوں علاقوں میں رہائش پذیر آبادی وائل پل پر جاری یکطرفہ ٹریفک کی وجہ سے گھنٹوں ٹریفک جام میں پھنسے رہتے ہیں یہاں تک کہ کنگن میں موجود ٹراما ہسپتال سے منتقل کئے جانے والے مریضوں کو لے جانے والی ایمبولینس گاڑیوں کو بھی ٹریفک جام کی زحمت برداشت کرنا پڑتی ہے۔تین سال قبل عالمی بنک کی امداد سے نالہ سندھ پر وائل کے مقام پر دوسرا پل بنانے کا منصوبہ منظور کیا گیا جس پر گزشتہ سال 2021 کے اکتوبر مہینے سے کام شروع کردیا گیا اور رواں سال جون میں مکمل کرکے عوام کے نام وقف کردیا جائے گا۔اس بارے میں محکمہ تعمیرات عامہ گاندربل کے ایگزیکٹو انجینئر ظفر قریشی نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ورلڈ بینک کے مالی تعاون سے پل کی تعمیر کے لئے 23 کروڑ سے زائد رقومات واگزار کی گئی ہیں جس کے لئے دوشفٹوں میں کام شروع کرکے اسے جون 2022 میں مکمل کرکے دو طرفہ ٹریفک کے لئے کھول دیا جائے گا۔