سرینگر میں بی ایس ایف اور آئی ٹی بی پی اہلکار سی آر پی ایف کی جگہ لیں گے

سرینگر/مرکزی سرکار کی طرف سے کشمیر میں سو نئی فورسز کمپنیوں کی تعیناتی کے اعلان کے گھنٹوں بعد جموں کشمیر پولیس نے سنیچر کو ایک حکمنامہ جاری کرتے ہوئے کہا کہ شہر سرینگر کے اہم اور حساس مقامات پر سی آر پی ایف کی جگہ بارڈر سیکورٹی فورسز (بی ایس ایف) اور انڈو تبتین بارڈرپولیس فورس (آئی ٹی بی پی) اہلکاروں کی تعیناتی عمل میں لائی جارہی ہے۔

زونل پولیس ہیڈ کورٹر کی طرف سے جاری ایک اور بیان میں بتایا گیا ہے کہ اس طرح کی تعیناتی کا مقصد امن و قانون کی صورتحال بنائے رکھنا ہے۔

نوے کی دہائی کے آغاز میں جب عسکریت شروع ہوئی تو بی ایس ایف کو اندرونی حفاظت پر مامور کیا گیا تھا۔

اس سے قبل مرکزی وزارت داخلہ نے اپنے ایک حکمنامے میں کہا کہ وہ کشمیر میں مرکزی فورسز کی نئی ایک سو کمپنیاں تعینات کررہے ہیں جن میں بی ایس ایف اور آئی ٹی بی پی اہلکار بھی شامل ہیں۔

یہ اقدام 14فروری کو عسکریت پسندوں کی طرف سے اُس خود کُش حملے کے بعد اُٹھایا گیا ہے جس میں کم سے کم49اہلکار جاں بحق ہوگئے۔