سرینگر ماسٹر پلان ۔ 2035: منصوبے کا اعلیٰ سطحی میٹنگ میں جائزہ لیا گیا

سرینگر //مکانات و شہری ترقی کے وزیر ست پال شرما نے افسروں کو ہدایت دی کہ وہ سرینگر ماسٹر پلان کو حتمی شکل دینے کے سلسلے میں فوری اقدامات کریں۔انہوں نے اس منصوبے کو ایک اعلیٰ دستاویز کے طور پر ترتیب دینے کی بھی ہدایت دی جس کی بدولت شہر کی تمام ترقیاتی ضرورتیں پوری کی جاسکیں اور سماج کے ہر ایک طبقے کو فائدہ ہو۔ان باتوں کا اظہار وزیر موصوف نے ڈرافٹ ماسٹر پلان سرینگر۔ 2035پر غور کرنے کے لئے بلائی گئی ایک جائزہ میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔امداد ، باز آباد کاری کے وزیر جاوید مصطفی میر، خزانہ کے وزیر سید محمد الطاف بخاری ، آئی اینڈ ایف سی کے وزیر شیام چودھری ، خوراک و رسدات کے وزیر محمد اشرف میر ،مکانات و شہری ترقی کی وزیر مملکت آسیہ نقاش ، صحت عامہ کے وزیر مملکت میر ظہور ، ارکان قانون سازیہ خورشید عالم ، نور محمد شیخ ، فائنانشل کمشنر مکانات و شہری ترقی کے بی اگروال ، ڈویژنل کمشنر کشمیر ، سیکرٹری اری گیشن اینڈفلڈ کنٹرول ایم راجو، کمشنر ایس ایم سی ، وی سی لاوڈا ،ڈی سی سرینگر ، چیف ٹاون پلانر و دیگر سینئر افسروں میٹنگ میں موجود تھے۔میٹنگ کے آغاز میں ٹاون پلاننگ آرگنائزیشن کشمیر کے افسروں کی ایک ٹیم نے ڈرافٹ ماسٹر پلان سرینگر ۔2035 کی تیاریوں کا خلاصہ ایک پاور پرزنٹیشن کے ذریعے کیا۔ ست شرما نے افسروں کو ہدایت دی کہ وہ کوئی بھی ترقیاتی کام شروع کرنے سے پہلے مقامی نمائندوں اور ارکان قانون سازیہ کو اعتماد میں لیں ۔