سرینگر ائر پورٹ پربیت الخلاء بچوں کی دیکھ بال والے کمرے میں تبدیل

سرینگر// شہری ہوا بازی کے وزیر مملکت جینت سنہا نے سوموار کو ائر پورٹ اتھارٹی آف انڈیا کو ہدایت دی کہ اس شکایت کی تحقیقات کرے کہ سرینگر ائر پورٹ پر بیت الخلاء کو بچوں کی دیکھ بھال کے کمرے کے طور استعمال کیا جارہا ہے۔ایوینیش کول نامی ایک شہری نے سماجی رابطہ گاہ ایک تصویر ٹوئٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے یہ شکایت کی اور وزیر کو بھی ٹیگ کیا۔ائر پورٹ اتھارٹی کے ایک اہلکار نے کہا کہ شکایت کنندہ نے سرینگر اور جموں کے ہوائی اڈوں پر بچوں کی دیکھ بھال والے کمروں کی ناگفتہ بہہ حالت اور سرینگر میں ایک ٹوائلٹ کو بچوں کی دیکھ بھال کے کمرے میں تبدیل کرنے کی شکایت کی ہے اور تحریر کیا کہ بچوں کی سہولت کیلئے ہر ائر لائنز 1500روپے کا چارج لیتی ہے تاہم انتظام نہیں ۔شہری ہوا بازی کے وزیر مملکت جینت سنہا نے ائر پورٹ اتھارٹی کو جانچ کرنے کی ہدایت دی۔ ڈائریکٹر ائر پورٹ آکاش دیپ ماتھر نے کہا کہ بچوں کی دیکھ بال کیلئے ایک ماہ کے اندر کمرے کا انتظام کیا جائے گا۔