سرکاری رقبہ سے ناجائز قبضہ ہٹانے کے لئے 1 ہفتہ کی مہلت

 ڈوڈہ //محکمہ مال نے سرکاری رقبہ سے ناجائز قبضہ ہٹانے و ملکیتی اراضی پر کسی بھی قسم کی تعمیر کرنے سے پہلے متعلقہ تحصیلدار سے این اوی وی  حاصل کرنے کو لازمی قرار دیتے ہوئے لوگوں سے ایک ہفتہ کے اندر اندر رقبہ ملکیتی سرکار پر ہر قسم کی تعمیرات ازخود ہٹانے کا نوٹس جاری کیا ہے۔اس سلسلہ میں ڈوڈہ ضلع کے سبھی تحصیلیداروں نے باقاعدہ طور پر اشتہارات جاری کئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق رقبہ ملکیتی سرکار بشمول روشنی ایکٹ اسکیم کے تحت حاصل کی گئی اراضی پر سے ناجائز قبضہ ہٹانے کے لئے محکمہ مال نے ایک بڑا قدم اٹھایا ہے اور ڈوڈہ ضلع کے سبھی تحصیلداروں نے باقاعدہ طور پر اشتہارات جاری کرنے کا عمل شروع کیا ہے جس میں سبھی لوگوں سے سرکاری رقبہ پر کسی بھی قسم کی تعمیرات و باڑ بندی ہٹانے کے لئے ایک ہفتہ کی مہلت دی گئی ہے۔متعلقہ تحصیلداروں کی جانب سے جاری اشتہارات میں یہ واضح کر دیا گیا ہے کہ جو شخص رقبہ ملکیتی سرکار سے ناجائز قبضہ ہٹانے میں ناکام رہا تو اس صورت میں ان تعمیرات ہٹانے کے لئے جو خرچہ آئیگا وہ انہیں ادا کرنا پڑے گا۔اشتہارات میں ملکیتی اراضی پر مکان، دوکان و گاو¿ خانہ کی تعمیر شروع کرنے سے پہلے این او سی حاصل کرنے کو لازمی قرار دیا ہے۔این او سی حاصل کئے بغیر تعمیرات کرنے پر وہ شخص ہر قسم کے نقصان کے لئے ذمہ دار ہوگا۔