سرکاری اراضی کا ناجائز استعمال

 مینڈھر//مینڈھر میںمحکمہ بجلی کے دفتر کے احا طہ کی حا لت دیکھنے لائق ہے اور لوگوں نے اس کو اپنی ذاتی جائیداد سمجھ رکھاہے۔کچھ لوگوں نے محکمہ بجلی کے احا طہ میںریت ، بجری، اینٹیں اور اپنی نجی گا ڑیا ں لگا کر سر کا ری دفا تر کی زمین کو اپنی جا ئید اد سمجھ رکھاہے لیکن محکمہ بجلی کے افسران بھی اس پر خاموش ہیں ۔دفتر کے احا طہ کے با ہر بڑا گیٹ بھی لگا ہوا ہے تاہم حیران کن بات یہ ہے کہ اس چا بیا ں کئی لو گو ں کے پاس ہیں ۔ اس ضمن میں گز شتہ دنو ں ایک در خو است بھی ایس ڈی ایم مینڈھر کے دفتر میں دی گئی تھی جس کے بعد ایس ڈی ایم مینڈ ھرنے اے ای ای مینڈھر اور متعلقہ جی ای کو ایک نو ٹس جا ری کیا اور اس بات کی ہدایت دی کہ وہ اپنے دفتر کے احا طہ سے تمام گا ڑیو ں کو با ہر نکا ل دیں اور گیٹ کو تا لا لگا کہ اسکی چا بیا ں خو د اپنے پاس رکھیں لیکن یہ سلسلہ کچھ دنو ں تک چلتا رہا جس کے بعد دوبا رہ احا طہ کے اندر لو گو ں نے ریت، بجری اور اینٹیں جمع کرنا شروع کردی ہیں جبکہ کچھ لوگوں نے اپنی نجی گا ڑیو ں کو پارکنگ سمجھ کر اس احاطے میں کھڑا رکھاہے ۔مقامی لوگوں نے اس پر اعتراض کرتے ہوئے کہاکہ  سرکا ری ملازمین کی ملی بھگت سے اس زمین کو لو گو ں نے اپنی جا ئیداد بنا لیا ہے ۔انہوںنے کہاکہ افسوسناک بات ہے کہ ایس ڈی ایم مینڈھر کے حکم نا مہ کے بعد بھی کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی جس سے صاف طورعیا ں ہو تا ہے کہ متعلقہ محکمہ کے ملا زمین اس میںملو ث ہیں۔ انہو ں نے کہا کہ محکمہ کے اعلیٰ افسرا ن اس دفتر اور اراضی کی حفاظت کو یقینی بنائیں اور ایسے لوگوں وملازمین کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے جنہوںنے اس اراضی کو تباہ کردیاہے ۔ اے ای ای محکمہ بجلی مینڈھرنے رابطہ کرنے پر کہاکہ وہ لوگ خود سامان دفتر کے احاطے میں ڈال دیتے ہیں اور گاڑیاں بھی پارک کردیتے ہیں ۔انہوںنے کہاکہ وہ کسی کو کیسے منع کرسکتے ہیں۔