سرپنچ پر تعمیراتی عمل میں مبینہ ہیرا پھیری کا الزام

محمد بشارت
کوٹرنکہ //کوٹرنکہ کی پنچایت کنتھو ل میں پنچایت سرپنچ و پنچوں کی آپسی رسہ کشی او ر تعمیر اتی عمل میں سرپنچ کی مبینہ دخل اندازی کے بعد اب ممبران نے سرپنچ کیخلاف عدم اعتماد کی مہم شروع کر دی ہے ۔پنچایت کے منتخب ممبران اور عام لوگوں نے سرپنچ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ منریگا کے علادہ دیگر سکیموں کی عمل آوری میں بڑے پیمانے پر ہیر اپھیری کی گئی ہے ۔منتخب ممبران لیاقت علی ،جمیلہ بیگم ،پرتیم سنگھ ،بلونت سنگھ ،محمد عظم ملک ،نائب سرپنچ محمد فاروق و دیگران نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ سرپنچ کی مبینہ مفاد پرستی کی وجہ سے پنچایت کا تعمیر اتی عمل بُری طرح سے متاثر ہوا ہے ۔انہوں نے کہاکہ مرکزی حکومت کی جانب سے پنچایتوں کی فلاح و بہبود کیلئے کروڑوں روپے کے فنڈز دئیے گئے ہیں لیکن گزشتہ ساڑھے تین برسوں کے دوران ان کی پنچایت میں تعمیر اتی عمل کے فنڈز میں بڑے پیمانے پر ہیرا پھیری کی گئی ہے ۔مقامی لوگوں و پنچایت ممبران نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ پنچایت کے جی آر ایس اور سرپنچ نے کمیشن کیلئے لوگوں کو یرغمال بنا رکھا ہے ۔انہوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ حکمات صادر کریں تاکہ جلدازجلد عدم اعتماد کیلئے ووٹنگ کروائی جائے ۔