سرنکوٹ میں سوچھ بھارت ابھیان پوری طرح سے مفلوج

 
سرنکوٹ//سرنکوٹ کی مختلف گلیوں میں گندگی کے ڈھیر جمع ہو نے کی وجہ سے مقامی لوگوں کیساتھ ساتھ راہگیروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں نے مقامی انتظامیہ ومونسپلٹی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ سرنکوٹ کو گزشتہ برس مونسپلٹی کے زمرے میں لایا گیا تھا جس کی وجہ سے مقامی لوگوں کو ایک صاف ستھرا ماحول دستیاب رکھنے کی امید پیدا ہو گئی تھی لیکن متعلقہ محکمہ کی غفلت شعاری کی وجہ سے مقامی لوگوں کو صاف ستھرا ماحول دستیاب ہی نہیں کیا جاسکا ۔انہوں نے کہاکہ اس وقت سرنکوٹ قصبہ کی مختلف گلیوں میں گندگی ،لفافوں وغیرہ کی وجہ سے عام لوگوں کو پیدل چلنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے جبکہ اسی طرح مذکورہ گندگی کی وجہ سے مچھر و کئی قسم کی بیماریاں پیدا ہو نے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے ۔مقامی لوگوں نے کہاکہ مرکزی حکومت کی جانب سے صفائی ستھرائی کو بحال رکھنے کیلئے سوچھ بھارت ابھیان ودیگر اسکیمیں شروع کی گئی تھی لیکن اس کے باوجود بھی سرنکوٹ میں صفائی ستھرائی کی جاب کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے ۔ایک مقامی شخص طارق مغل نے کہاکہ انتظامیہ کی جانب سے صفائی کیلئے شروع کی گئی اسکیمیں صرف کاغذوں تک محدود رہی چکی ہیں جبکہ عام لوگوں کو کوئی سہولیات فراہم نہیں کی جارہی ہیں ۔مقامی لوگوں نے ایس ڈی ایم سرنکوٹ سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ قصبہ کا خود معائینہ کریں تاکہ اصل صورتحال کا جائزہ لے سکیں ۔