سرنکوٹ میں رہبرتعلیم اساتذہ نے یوم مئی یوم سیاہ کے طور پر منایا

سرنکوٹ // سرنکوٹ میں رہبر تعلیم اساتذہ نے یومِ مئی کویوم سیاہ کے طور پر منایا۔ اساتذہ نے اپنے سروں پر سیاہ پٹیاں باندھ کر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے سرکار پر الزام لگایا کہ وہ اساتذہ کو وقت پر تنخواہیں نہ دے کر انہیں ہراساں کر رہی ہے جس کی وجہ سے اساتذہ اساتذہ ذہنی طور پر پریشان ہو چکے ہیں اور ان کے بچے بھکمری کا شکار ہو گئے ہیں ۔اساتذہ نے کہا کہ سرکار نے ان کے ساتھ وعدہ کیا تھا کہ وہ ایس ایس اے ٹیچرز کی تنخواہیں ماہانہ واگذار کی جائے گی مگر اب حکومت ٹال مٹول کر رہی ہے اور اساتذہ کو ہر ماہ کی تنخواہ لینے کے لئے سڑکوں پر اترنہ پڑتا ہے۔اس دوران رہبر تعلیم اساتذہ نے زونل ایجوکیشن دفتر سے ایک ریلی نکالی جس کی صدارت فورم کے تحصیل صدر سرنکوٹ بدر دین راتھرکر رہے تھے۔ یہ ریلی ایس ڈی ایم سرنکوٹ کے دفتر پہنچی جہاں انہوں نے اس ضمن میں ایس ڈی ایم سرنکوٹ کو ایک میمورنڈم پیش کیا ۔رہبر تعلیم ٹیچرز فورم پونچھ کے ضلع صدر شاہ نواز کاظمی نے اس موقعہ پر بولتے ہوئے کہا کہ سرکار اپنے وعدے پورے کر ے ورنہ اساتذہ آنے والے وقت میں ریاست کے تمام اسکولوں کو بند کر کے احتجاج کرنے پر مجبور ہو جائیں گے۔فاروق چوہدری نے بھی سرکار سے اپیل کی ہے کہ وہ اساتذہ کو وقت پر تنخواہیں واگزار کرے۔محمد یوسف شاہ ذونل صدر سرنکوٹ نے کہا کہ سرکار نے اگر ان کے مطالبات کو تسلیم نہ کیا تو اس کے بعد اساتذہ کوئی کڑا قدام بھی اٹھا سکتے ہیں۔احتجاج میں سید علی مرتضیٰ شاہ، عبدالوارث، عبدالقوی، صدیق احمد صدیقی ،عارف بھٹی ،سرفراز بھٹی ،محمد فاروق، نور احمد ،نصرت شاہ، زاہد خان،محمد فاروق، ظہیر عباس، غلام عباس، الطاف حسین وغیرہ بھی موجود تھے۔