سرنکوٹ میں رابطہ سڑکیں خستہ حالی کاشکار

سرنکوٹ// سرنکوٹ کے دیہی علا قوں میں متعدد رابطہ سڑکیں انتہائی خستہ حالی ہو شکار ہو تی جارہی ہیں جس کی وجہ سے مکینوں ،مسافروں و ٹرانسپورٹروں کو دوران آمد ورفت شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں نے تعمیر اتی ایجنسیوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ حالیہ کئی عرصہ سے رابطہ سڑکیں ٹرانسپورٹروں و مسافروں کیلئے درد سر بنی ہوئی ہیں لیکن ان کو معیاری بنانے میں کوئی دلچسپی ظاہر نہیں کی جارہی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ بفلیاز تا فضل آباد سی آر ایف روڈ گزشتہ کئی دہائیوں سے زیر تعمیر ہے لیکن اس کو مکمل کرنے کیلئے کوئی عملی کام نہیں کیا جارہا ہے۔انہوں نے کہاکہ گزشتہ کچھ عرصہ سے سڑک کی کشادگی کیلئے کام شروع کیا گیا تھا لیکن بد قسمتی سے اس کو بند کر دیا گیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ سڑک میں سے اٹھنے والی دھول اور کھڈوں کی وجہ سے جہاں مسافر و ٹرانسپورٹر پریشان ہیں وہائیں سڑک کے ملحقہ علا قوں میں رہنے والے لوگوں کی دقتوں میں بھی اضافہ ہونا شروع ہو گیا ہے ۔انہوں نے جموں وکشمیر انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ سڑ ک کو معیاری بنانے کیلئے متعلقہ حکام کو ہدایت جاری کی جائیں ۔اسی طرح پمروٹ پل تا سانگلہ سڑک کی حالت آہستہ آہستہ ابتر ہو تی جارہی ہے ۔مقامی لوگوں نے انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ سرنکوٹ سے سانگلہ کا سفر دس منٹوں کا ہے لیکن سڑک کی انتہائی غیر معیاری حالت کی وجہ سے مذکورہ سفر بھی گھنٹوں میں طے ہو پارہا ہے ۔انہوں نے کہاکہ سڑ کی مرمت کے سلسلہ میں متعلق حکام سے کئی مرتبہ رجوع کیا گیا لیکن ابھی تک کوئی عملی اقدامات نہیں اٹھایا جاسکا ۔سرنکوٹ کی عوام نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ پسماندہ علا قوں کی تعمیر وترقی کیلئے رابطہ سڑکو ں کی حالت کو معیاری بنایا جائے ۔