سخت گیر پالیسی ملک کی جمہوریت کیلئے سم قاتل:محمداکبرلون

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے سینئر لیڈر اور کن پارلیمان  محمد اکبر لون نے مرکزی وزارت داخلہ اور جموں و کشمیر انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ وہ عالمگیر وباء کروناوائرس کے پیش نظرتمام سیاسی قیدیوں اور نوجوانوں کوفوری طور رہا کرے ۔ایک بیان میں انہوں نے سیاسی قائدین اور نوجوانوں کی نظر بندی پر تشویش کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ جیلوں میں نظربندقائدین اور نوجوانوں کی صحت کافی خراب ہوچکی ہے ۔انہوں نے کہا نیشنل کانفرنس کے جنرل سیکریٹری علی محمد ساگر کی صحت بھی نظربندی کے دوران کافی متاثر ہوئی ہے ۔محمداکبر لون نے کہا کہ  سیاسی رہنمائوں کو طویل عرصے تک نظر بندرکھنا آئین اور جمہوری مزاج کے سراسر منافی ہے ۔انہوںنے کہا کہ یہ بدقسمتی کہ موجودہ مرکزی حکومت کشمیریوں کے ساتھ بالکل نا انصافی کر رہی ہے ۔لون نے کہا کہ حکومت کی سخت گیر پالیسی ملک کی جمہوریت کے لئے سم قاتل ہے ۔اسی دوران ضلع سرینگر کے صدر اور سابق ایم ایل اے پیر آفاق احمد نے انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ وہ موجودہ لاکڈون کے پیش نظر لوگوں کی راحت رسانی کے کاموں میںسرعت لائی جائے اور ان علاقوں تک ضروریات زندگی پہنچائے جائیں جہاں ابھی تک لوگوں کو یہ اہم چیزیں فراہم نہیں کئے گئے ہیں۔