ساوجیاں کا خوبصورت سیاحتی مقام رنگاواڑ انتظامیہ کی عدم توجہی کا شکار سہولیات کی عدم دستیابی پر سیاح سیخ پا

اقامتی سہولیات کا فقدان ،منڈی ۔ساوجیاں سڑک کی ابترحالت سے لوگ پریشاں

عشرت حسین بٹ

منڈی//ضلع پونچھ کے مختلف قدرتی حسن سے مالامال سیاحتی مقامات انتظامیہ کی عدم توجہی کا شکار ہیں جس کے سبب آئے روز سیاح گوناگوں مشکلات سے دوچار ہوتے ہیں ۔منڈی تحصیل کے منڈی صدر مقام سے قریب بیس کلو میٹر کی دوری پر واقع قدرتی حسن سے مالامال سرحدی علاقہ ساوجیاں کا خوبصورت سیاحتی مقام رنگاواڑ ہے جہاں ضلع بھر کے ساتھ ساتھ ملک کی دیگر ریاستوں سے بھی سیلانی قدرت کے ان خوبصورت مناظر سے لطف اندوز ہونے کے لیے آتے ہیں تاہم یہ سیاحتی مقام انتظامیہ کی عدم توجہی کا شکار ہے۔جہاں سیلانی سیر و تفریح کے لیے گرمی کے موسم میں جاتے ہیں تو انہیں سڑک کی ابتر حالت اور سیاحوں کے لیے خاطر خواہ انتظامات کی عدم دستیابی سے شدید پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

 

اس حوالے سے سیاحوں اور مقامی لوگوں نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ علاقہ ساوجیاں کے نیڑیاں،رنگاواڑ،سرری منگیانہ،آنگن پتھری،و دیگر خوبصورت سیاحتی مقامات پر جہاں محکمہ سیاحت یا انتظامیہ کی جانب سے سیاحوں کے ٹھہرنے کے لیے ہٹ یا دیگر کوئی ضروریاتی بندوبست نہیں کیے گیے ہیں وہیں منڈی تا ساوجیاں سڑک کی خستہ حالت سے سیاحوں کو اکثر مایوسی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ مقامی لوگوں نے کہا کہ اس وقت بے روزگاری عروج پر ہے جس کی وجہ سے مقامی نوجوانوں کو بیرون ریاستوں میں اپنا روزگار کمانے کے لیے جانا پڑتا ہےجس کو دیکھتے ہوئے اگرچہ بارہا اس معاملہ کو انتظامیہ کے نوٹس میں لایا گیا لیکن اس کے باوجود انتظامیہ کی اس جانب سے کوئی توجہ نہیں ہے۔ انہوں نے انتظامیہ سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ منڈی تا ساوجیاں سڑک کی ابتر حالت کو بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ ساوجیاں علاقہ کے ان خوبصورت سیاحتی مقامات کو سیاحت کے نقشہ پر لایا جائے اور سیاحوں کے لیے تمام تر انتظامات کو یقینی بنایا جائے تاکہ سیاحوں کی مشکلات حل ہوں اور یہاں سیاحت کو فروغ مل سکےجس سے یہاں کے نوجوانوں کو اپنا روزگار کمانے کے مواقع فراہم ہوسکتے ہیں۔