سالانہ بجٹ کے اہداف مقرر

ترقی کی رفتار اور محکموں کے درمیان ہم آہنگی پر تبادلۂ خیال

 
جموں//لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ کی صدارت کی جس میں جموںوکشمیر یوٹی بجٹ 2022-23ء میں اعلان کردہ اِقدامات کی عمل آوری کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا گیا جس کا مقصد ترقی کی رفتار کو برقرار رکھنا اور مختلف محکموں کے درمیان ہم آہنگی لانا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ ایکشن اور ینٹیڈ پلان تیز رفتار اِقتصادی ترقی کی عکاسی کرناہے ، تیز رفتار سماجی تبدیلی کے لئے اِداروں کو مضبوط کرنا اور ایکویٹی سے ترقی کو یقینی بنانا ہے تاکہ ہر شہری جموںوکشمیر کی خوشحالی سے فائدہ اُٹھاسکے۔لیفٹیننٹ گورنر نے اِنتظامی محکموں اور ضلعی اِنتظامیہ سے کہا کہ وہ قریبی تال میل کے ساتھ کام کریں اور عوامی نمائندوں اور دیگر شراکت داروں کے ساتھ مشاورت سے جموںوکشمیر یوٹی ور ضلع کے منصوبے پیش کریں تاکہ ’’ سب کا ساتھ سب کا وِکاس ، سب کا وشواس ، سب کا پریاس ‘‘ بغیر کسی امتیاز کے لوگوں کی زندگیوں میں تبدیلی لانے والی تبدیلیاں کے نظرئیے کو عملی جامہ پہنایا جاسکے ۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ ہمارے پاس بنیادی ڈھانچے کی ترقی ، تعلیم ، ہیلتھ کیئر ، پی آر آئیز کو مضبوط بنانے ،سرمایہ کاری اور ترقی میں سہولیت فراہم کرنے ، روزگار ، نوجوانوں و خواتین کو بااختیار بنانے اور سماجی شعبے کی سکیموں کے لئے بجٹ سپورٹ میں خاطر خواہ اِضافہ ہوا ہے تاکہ ہرفرد تک فوائد پہنچ سکیں۔لیفٹیننٹ گورنر نے چھ اہم اجزأ بشمول مقاصد، کل اخراجات، وسیع رہنما خطوط، ٹائم لائنز کے ساتھ قابل پیمائش نتائج، اخراجات کا مرحلہ اور تشخیص کے کام کا منصوبہ تیار کرنے کا مشورہ دیا۔ٹینڈرنگ کے عمل کو مئی کے مہینے تک مکمل کرنے کے لئے مخصوص ہدایات جاری کی گئیں۔اُنہوں نے کہا کہ جموںوکشمیر یوٹی اور ضلع کے منصوبے جموں وکشمیر کی ترقی اور خوشحالی کا روڈ میپ ہونا چاہیے۔اُنہوں نے مزید کہا کہ یہ جموں وکشمیر کے لوگوں کی ضروریات اور خواہشات کی عکاس ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے گذشتہ ڈیڑھ برس میں متعارف کی گئی گورننس اصلاحات پر بات کرتے ہوئے کہا کہ مجموعی ترقی کے عمل کو بہتر بنانے کی کوششوں کے مثبت نتائج برآمد ہوئے ہیں۔اُنہوں نے کہا کہ گذشتہ مالی برس میں 25.33 فیصد اضافے کے ساتھ ٹیکس وصولی 15,180 کروڑ روپے تک پہنچ گئی۔ تمام ٹریجرری بلز، تصدیق شدہ ٹھیکیداروں اور زیر اِلتوا ٔمنصوبوں کے بل، 810 کروڑ روپے کی پاور پرچیز کی ذمہ داری کو کلیئر کیا گیا۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ بجلی کی وصولی میں 625 کروڑ روپے کا اِضافہ درج کیا گیا۔ اس کے علاوہ کیرو اور رتلے پروجیکٹوں میں جموں و کشمیر کے 600 کروڑ روپے کی ایکویٹی شراکت کی ادائیگی کی گئی۔ اِنتظامی سیکرٹریوں ، ضلع ترقیاتی کمشنروں اور دیگر متعلقہ حکام کو سرحدی علاقوں اور دیہاتوں کی ترقی ، خواتین اور نوجوانوں کو بااختیار بنانے ، بزرگ شہریوں کی بہبود ، نشا مکتی ابھیان ، جل جیون مشن ، سی ایس ایس کی سچوریشن ، منریگا،دیہی معیشت اور بنیادی ڈھانچہ ، قبائلی بہبود پر خصوصی توجہ دینے کی ہدایت دی گئی۔لیفٹیننٹ گورنر نے ان کے مؤثر نفاذ کا اندازہ لگانے کے لئے کئے جانے والے منتخب کاموں کا تجزیہ کرنے کی بھی تجویز دی ۔چیف سیکرٹری ڈاکٹر ارورن کمار مہتا نے اَفسران سے کہا کہ وہ جموںوکشمیر یوٹی میں اِقتصادی ترقی کی رفتار کو تیز کرنے کے لئے مشن موڈ پر کام کریں۔اُنہوں نے کہا کہ اِی ۔ گورننس ، اِی ۔ آفس ، زندگی میں آسانی ، شفافیت اور فلاحی سکیموں کے لحاظ سے جموںوکشمیر سر فہرست کارکردگی دِکھانے والے یوٹیوں میں سے ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ گذشتہ مالی برس کی کامیابی کو نقل کرنے کے لیے یوٹی اور ضلع کے منصوبوں میں تمام اہم پہلوؤں کو مدنظر رکھا جانا چاہیے۔ایڈیشنل چیف سیکرٹری محکمہ خزانہ اتل ڈولو نے کہا کہ 2022-23ء کے لئے جموںوکشمیر یوٹی کے  1,12,950 کروڑ روپے کے تاریخی بجٹ میں لوگوں کی اُمنگوں کو پورا کرتے ہوئے جموں و کشمیر میں ہمہ گیر ترقی کا تصور کیا گیا ہے۔ انہوں نے گزشتہ مالی برس میں درج کی گئی حصولیابیوں پر بھی روشنی ڈالی۔تمام اِنتظامی محکموں کو 10؍ اپریل 2022ء تک مجاز اَتھارٹی کی منظوری کے ساتھ بی اِی اے ایم ایس ( بیمز) پورٹل پر منظور شدہ ورکس پلان اَپ لوڈ کرنے کو کہا گیا ہے۔محکمے اپریل 2022 ء کے مہینے میں فوری طور پر ای۔ ٹینڈرنگ کا عمل شروع کریں گے اور اس بات کو یقینی بنائیں گے ۔ 
 

نوریہہ اور رمضان المبارک

لیفٹنٹ گورنر کی مبارکباد

جموں//لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے جموں و کشمیر کے لوگوں کو نوراترا، نوریہہ اور ماہ رمضان کے موقع پر دلی مبارکباد پیش کی ہے۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ مبارک تہوار بنی نوع انسان کی بھلائی پر ہمارے یقین کو مضبوط کرتے ہیں اور سب کو ایک نیک زندگی گزارنے کی ترغیب دیتے ہیں۔ دعا ہے کہ یہ تہوار امن، خوشحالی اور خوشی لائے اور ہمدردی اور بھائی چارے کے جذبے کو فروغ دیں۔انہوںنے چیترا نورات کے مبارک تہوار کے لیے نیک تمناؤں کا اظہارکیا ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے رمضان کے مقدس مہینے کے آغاز پر لوگوں کو اپنی نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا۔ انہوں نے کہا کہ مقدس مہینہ صبر، تحمل، تحمل اور کفایت شعاری کی اقدار کا مظہر ہے۔