سادھوی نرنجن جیوتی نے 43.17 کروڑ روپے کے منصوبوں کا افتتاح کیا | رام بن ضلع میں 21.83 کروڑ روپے کے منصوبوں کا ای فاؤنڈیشن رکھا

رام بن// مرکزی وزیر برائے دیہی ترقی اور امورِ صارفین ، خوراک اور عوامی تقسیم سادھوی نرنجن جیوتی نے کہا کہ قوم کی جامع اور پائیدار ترقی کو برقرار رکھتے ہوئے اس کی دیہی بستیوں کی ترقی پوشیدہ ہے ، موجودہ حکومت وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں دیہی معیشت کو انفراسٹرکچر ، پائیدار اثاثوں کی تخلیق اور روز گار کے مواقع پیدا کرنے ، اجرت اور خود روز گار کے لحاظ سے دیہی معیشت کو ترقی دینے کے مقصد سے مختلف اسکیمیں شروع کی ہیں ۔ان باتوں کا اظہار مرکزی وزیر جو مرکزی حکومت کے عوامی آؤٹ ریچ پروگرام کے ایک حصے کے طور پر جموں و کشمیر کے دو روزہ دورے پر ہیں ، نے یہاں ڈسٹرکٹ ایڈمنسٹریٹو کمپلیکس میترا رام بن میں دیہی ترقی کے شعبے کی جانب سے منصوبوں کا ای افتتاح کرنے کیلئے منعقدہ  اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ ضلعی انتظامیہ کو ہدایات دیتے ہوئے وزیر نے بلاک سطح پر پنچائت بھون کی تعمیر کیلئے ایک جامع تجویز وضع کرنے کیلئے کہا ۔ انہوں نے متعلقہ افراد کو ہدایت دی کہ وہ راشن کارڈوں کے ساتھ آدھار کا تعلق یقینی بنائیں تا کہ مستحقین تمام سماجی اور مالی امداد کی اسکیموں سے فائدہ اٹھا سکیں ۔ انہوں نے ڈائریکٹر امور صارفین سول سپلائیز اور پبلک ڈسٹریبیوشن کو بھی مناسب اقدامات کرنے کی ہدایت دی تا کہ مستحقین میں راشن کی تقسیم ان کے دروازے پر یقینی بنائی جا سکے ۔ جموں و کشمیر میں پہلی بار تین درجے کے پنچائتی راج نظام کے قیام کیلئے حالیہ بلدیاتی انتخابات میں حصہ لینے کیلئے جموں و کشمیر کے لوگوں کی تعریف کرتے ہوئے وزیر نے کہا کہ یہ ترقی اور منصوبہ بندی کے عمل میں عام لوگوں کی شرکت میں بہت آگے جائے گا ۔ انہوں نے متعلقہ افراد کو ہدایت دی کہ وہ ضلع میں کوشل وکاس سنٹرز کے قیام کی تجاویز پیش کریں تا کہ ہُنر مند انسانی وسائل کو فروغ دیا جا سکے تا کہ نوجوان آتم نربھر بنیں ۔ وزیر موصوف نے عوامی اہمیت کے مختلف منصوبوں کا افتتاح کیا جن کی مالیت 43.17 کروڑ روپے ہے ۔ جن منصوبوں کا وزیر نے افتتاح کیا ان میں ڈسٹرکٹ ہسپتال رام بن میں 750 ایل پی ایم آکسیجن جنریشن پلانٹ کا پہلا یونٹ ، سیلر میں 28 ایم سپین فُٹ برج ، شیر بی بی ، اکھڑہال میں کمیونٹی ہال ، جی ایچ ایس منگت زون کھاری میں سماگرہ کے تحت 8 ٹیچرز کوارٹر، تتہ پانی ۔ رائے محلہ لنک روڈ ، چورپتھ پر فُٹ برج کا کام ، پنچائت تری گام اپر ، کھونگا ۔ کوٹھی جاگیر روڈ اسٹیج 2 ، ایڈمرگ ۔ مہو روڈ اسٹیج 2 اور بانہال ڈولگام روڈ اسٹیج 2 شامل ہیں ۔ سادھوی نرنجن نے مختلف اثاثوں کا ای فاؤنڈیشن بھی رکھا جن کی تخمینہ لاگت 21.83 کروڑ روپے ہے ۔ جن منصوبوں کا وزیر نے ای سنگِ بنیاد رکھا ان میں فیلٹی رام بن ڈسٹرکٹ یوتھ سنٹر چاندروگ میں ڈی ڈی سی /بی ڈی سی رہائش ، چپنری ۔ گڈر روڈ ، کھاریکوٹ ۔ سراچی روڈ ، بھونی دار ۔ راہون روڈ براستہ کھریہال گوہالہ مشتاق پورہ اور فیز ۔ پہلی چونتھن ۔ ہالہ سڑک شامل ہیں ۔ بعد میں وزیر نے اجولا اسکیم کے تحت مستحقین میں ایل پی جی کنکشن تقسیم کئے ۔ انہوں نے ممکن سکیم کے تحت مستحقین کو گاڑیوں کی چابیاں حوالے کیں ۔ انہوں نے سکالر شپ سکیم کے تحت تعمیراتی کارکنوں میں چیک بھی تقسیم کئے ۔ چندر کوٹ میں وزیر نے 32.16 کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کئے جانے والے یاتری نواس پر پیش رفت کا بھی معائینہ کیا ۔ قبل ازیں مختلف نمائندگان اور افراد نے وزیر سے بانہال میں ملاقات کی ۔ وزیر سے جن نمائندوں نے ملاقات کی ان میں چیئر پرسن ڈی ڈی سی اور بی ڈی سی ، یوتھ کلب اور سرپنچ شامل تھے انہوں نے اپنے اپنے علاقوں میں عوامی اہمیت کے حامل مسائل پیش کئے ۔ چیئر پرسن ڈسٹرکٹ ڈیولپمنٹ کونسل رام بن ڈاکٹر شمشاد شان ، وائس چیئر پرسن ڈی ڈی سی رابعہ بیگ ، صدر میونسپل کونسل رام بن سنیتا دیوی ، چیئر پرسن بی ڈی سی ، ممبران ڈی ڈی سی اور بی ڈی سی ، ڈائریکٹر دیہی ترقی جموں ، ڈائریکٹر سی اے پی ڈی جموں ، ایس ایس پی رام بن کے علاوہ دیگر اعلیٰ حکام اس موقعہ پر موجود تھے ۔ اپنے دورے کے پہلے دن انہوں نے بانہال میں IRCON INTERNATIONAL کے ریسٹ ہاس میں پنچائتی نمائندوں ، پنچایتی رضاکاروں اور ضلع افسروں کی ایک میٹنگ میں شرکت کی۔ ڈپٹی کمشنر رامبن مسرت الاسلام نے ضلع رامبن کی تعمیر وترقی کے بارے میں وزیر مملکت کو آگاہ کیا گیا جبکہ ضلع ترقیاتی کونسل چیئر پرسن ڈاکٹر شمشادہ شان کے عللاوہ دیگر مخصوص پنچایتی نمائندوں نے محکمہ دیہی ترقیات اور امور صارفین سے متعلقہ عوامی مسائل وزیر کے سامنے پیش کئے ۔ مرکزی وزیر مملکت سادھوی نرنجن جیوتی نے پنچائتی نمائندوں کو یقین دلایا کہ ان کے معاملات پر ہمدردانہ غور کیاجائے گا۔ بانہال میں ہوئی تقریب پرذرائع ابلاغ کے چند ہی نمائندوں کو بلایا گیا تھا لیکن پنچائتی نمائندوں اور مرکزی وزیر مملکت کی میٹنگ میں انہیں جانے کی اجازت نہیں دی گئی جبکہ رام بن میں چند مخصوص افراد کو ہی کانفرنس ہال میں داخلے کی اجازت تھی جس پر ضلع رام بن کی بیشتر صحافی برادری ضلع انتظامیہ سے سے ناراض ہے۔ بدھ کی دوپہر بعد تک بانہال میں مشغول رہنے کے بعد مرکزی وزیر مملکت سادھوی نرجن جیوتی بانہال اور رام بن سیکٹر میں زیر تعمیر فورلین شاہراہ کا جائزہ لیتے ہوئے رام بن پہنچ گئیں جہاں انہوں نے کئی پروجیکٹوں اور عوامی کاموں کا آن لائن افتتاح کیا اور پنچائتی نمائیندوں اور لوگوں سے بات کی ۔ انہوں نے مختلف مرکزی سکیموں کے تحت مستحق افراد میں سکوٹیاں اور گاڑیاں تقسیم کیں ۔ مرکزی وزیر مملکت رات کا قیام پتنی ٹاپ میں کریںگی جہاں وہ کل بٹوٹ میں عوام سے ملاقات کریںگی۔ بدھ کی شام رام بن میں زرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے سادھوی نرجن جیوتی نے کہا کہ ریاست جموں و کشمیر میں دفعہ 370کے خاتمے اور پنچایت راج انتخابات کے کامیاب انعقاد کے بعد تعمیر و ترقی میں تیزی آئی ہے اور عوام کے مسائل ہر سطح پر سننے جارہے ہیں اور لوگوں میں بیداری اور خوشی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پنچایتی راج نظام کو شروع کرنے کے بعد باقی ریاستوں کی طرح جموں و کشمیر میں بھی لوگوں کو دقتیں پیش آرہی ہیں اور آئندہ ان تمام مشکلات اور مسائل کا حل نکالا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ میں نے عوامی نمائندوں کی باتیں سنی ہیں اور میں اپنی اور دیگر وزراتوں سے متعلقہ عوامی مسائل کو اٹھانے اور حل کرنے کی ہر ممکن کوشش کرونگی ۔انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کے عوامی مسائل بہت پرانے ہیں اور انہیں وقت کے ساتھ ساتھ حل کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا وزیر اعظم نریندر مودی کی ہدایت پر ممبرانِ پارلیمان ریاست جموں و کشمیر کا دورہ کر رہے ہیں اورایسا ماضی میں کبھی نہیں ہوا ہے اور پچھلے ستر سال میں پہلی بار مرکزی وزرا اور عوام کے درمیان براہ راست بات چیت ہورہی ہے اور اس کے اچھے نتائج نکل رہے ہیں۔ بھارتیہ جنتا پارٹی کے رام بن اور بانہال کے لیڈروں نے وزیر مملکت کا فورلین ٹنل بانہال کے باہر ان کا پرتپاک استقبال کیا اور ارکان انٹرنیشنل کے گیسٹ ہاس میں بھارتیہ جنتا پارٹی بانہال نے ان کا خیر مقدم کیا اور گلدستے پیش کئے۔