سابق مرکزی وزیر یشونت سنہاکی قیادت میں وفد دورۂ کاوادی آج

 سری نگر// سابق مرکزی وزیر اورترنمول کانگریس کے سینئرلیڈر یشونت سنہاکی قیادت میں سابق حکام اورسیاسی تجزیہ نگاروں پرمشتمل ایک وفد آج یعنی منگلوارکوکشمیرپہنچے گااور یہاں دوروزتک قیام کے دوران یہ وفد کئی سیاسی لیڈروں اوردیگر افراد کیساتھ بھی ملاقات کرے گا۔کے این ایس کومعلوم ہواکہ یشونت سنہا جوسابق مرکزی وزیرخزانہ اوروزیر خارجہ بھی ہیں ،کی قیادت میں ایک وفد سری نگرپہنچے گا،جس میں سابق ائرمارشل کپل کاک اورمرکز برائے مذاکرہ ومفاہمت کی ایگزیکٹو سیکرٹری سوشوبھا باروے شامل ہیں ۔ذرائع نے بتایاکہ یہ وفد سری نگرمیں دوروزتک قیام کرے گا اوراس دوران یشونت سنہا اورانکے رفقاء یہاں کچھ سیاسی لیڈروں اوردیگرلوگوں کیساتھ بھی ملاقات کریں گے ۔ذرائع کے مطابق یشونت سنہااوردیگر منگل کویہاں واردہونے کے بعدفاروق عبداللہ ،محبوبہ مفتی ،یوسف تاریگامی اوردیگر کچھ لیڈروں کیساتھ بھی ملاقات کررہے ہیں ۔ذرائع کے مطابق مذکورہ وفد کادورہ کشمیر اس ٹریک ٹو ڈپلومیسی کی ایک کڑی ہے ،جس کامقصدروابط کوبڑھانا ہے ۔خیال رہے مذکورہ گروپ نے دفعہ370و35Aکی منسوخی اورجموں وکشمیرکی تقسیم وتنظیم نوکے بعدبھی کشمیرکادورہ کیاتھااورحالیہ کچھ برسوں میں یشونت سنہا اور دیگر کئی بار کشمیرکادورہ کرچکے ہیں ۔مذکورہ گروپ نے اپنے سابقہ دوروں کے دوران جموں وکشمیر کے کئی علاقوں کادورہ کرکے وہا ں سماج کے مختلف طبقوں کے نمائندوں کیساتھ گفت وشنید کی تھی ۔غورطلب ہے کہ مذکورہ گروپ نے گزشتہ برس دفعہ370و35Aکی منسوخی اورجموں وکشمیرکی تقسیم وتنظیم نوکے حوالے سے ایک رپورٹ بھی جاری کی تھی ۔یشونت سنہا کی سربراہی میں قائم جی جی سی نامی گروپ کاوفد ایک ایسے وقت میں کشمیر پہنچ رہاہے ،جب مرکزی سرکارنے جموںوکشمیرکے14سینئرسیاسی لیڈروں کیساتھ نئی دہلی میں گزشتہ ماہ کی24تاریخ کواپنی نوعیت کی پہلی اوراہم میٹنگ منعقد کی ،جس کی صدارت وزیراعظم مودی نے کی ۔یہ بات بھی غورطلب ہے کہ آج یعنی6جولائی کوہی حدبندی کمیشن اورالیکشن کمیشن آف انڈیا پرمشتمل ایک اہم وفد بھی سری نگرپہنچ رہاہے ،جو چار روزتک جموں وکشمیر میں قیام کے دوران تمام بیس ضلعی الیکشن افسروں(ڈپٹی کمشنروں)اورسیاسی لیڈروں کیساتھ بھی ملاقاتیں اورتبادلہ خیال کرے گا۔