زیڈ مور ٹنل امسال نومبر میں مکمل کرنے کا ہدف ۔ 85فیصد کام ہوگیا، ویسٹ پورٹل تک متبادل سڑک کی تعمیر جاری

 غلام نبی رینہ

کنگن//گگن گیر سونہ مرگ کو ملانے والی زیڈ مور ٹنل کا کام امسال نومبر میں مکمل کیا جائے گا جبکہ کلن سے ویسٹ پورٹل ٹنل تک سڑک کا کام جاری ہے۔ سونہ مرگ کو برفباری کے دوران آمدورفت کے لئے بند کیا جاتا رہا ہے جس کے باعث موسم سرما کے دوران سونہ مرگ کی سیرو تفریح کے لئے آنے والے سیلانیوں کو 11 کلو میٹر قبل گگن گیر سے واپس لوٹنا پڑتا ہے۔ برفانی تودے گر نے کے خطرات کے پیش نظرشاہراہ کو 15نومبر سے بند کیا جاتاہے لیکن حکومت نے سونہ مرگ کو سال بھر بحال رکھنے کے لئے گگن گیر سے شتکڑی تک 3378 کروڑ روپے کی لاگت سے.5 6کلو میٹر زیڈ مور ٹنل کا کام 2005 میں شروع کیا ۔اس مقام پر ٹنل بنا نے کا مقصد موسم سرما کے دوران بھی شاہراہ پر آمدورفت بحال رکھنا ہے تاکہ سونہ مرگ میں بھی گلمرگ کی طرح موسم سرما کے دوران سیاحوں کی گہما گہمی اور سرگرمیاں رہیں۔ این ایچ آئی ڈی سی ایل کے جنرل منیجر وجے کمار پانڈے نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ٹنل کا کام 84فیصد مکمل ہوگیا ہے جبکہ، سڑک جو ویسٹ پورٹل تک جاتی ہے، پر کام شدو مد سے جاری ہے۔ وجے پانڈے نے بتایا کہ امسال برفباری کی وجہ سے جو برفانی تودہ گرآئے تھے، اسکی وجہ سے دو ماہ تک کام بند رہا ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ حکومت کی طرف سے جو ہدایات ملی ہیں،اس کے مطابق دسمبر 2023تک ٹنل کو مکمل کرنا ہے۔ وجے پانڈے کا کہنا تھا کہ جو ویسٹ پورٹل تک جوسڑک جاتی ہے وہ ایک دو جگہوں پر ڈھ گئی ہے اور ٹنل تک پہنچنے کے لئے فی الحال ایک متبادل راستہ تیارکیا جارہا ہے ، جو مکمل طور پر میکڈمائز ہوگا۔