زوجیلا میں برفانی تودا گر آیا،ڈرائیور زد میں آکر دفن

کنگن+گاندربل // سرینگر لداخ شاہراہ پرزوجیلا درہ میں برفانی تودہ گرآیا جس کی زد میں آکر ایک ڈرائیور زندہ دفن ہوگیاجبکہ گریز میں برفانی تودہ دریا کشن گنگامیں گرنے سے پانی کا بہائو رک گیا جس کے نتیجے میں گجران گاؤںکو ہائی الرٹ پر رکھا گیا ہے۔ سرینگر لداخ شاہراہ پر پانی متھہ زوجیلا کے مقام پر برفانی تودہ گرآیا جس  کی زد میں آکر بیکن میں بحیثیت ڈرائیور کام کررہا غلام رسول بٹ ولد غلام محمد بٹ ساکن گگن گیر لاپتہ ہوگیا ۔ پولیس اور بیکن عملے نے مذکورہ ڈرائیور کو بازیاب کرنے کی بچائو کارروائی کی لیکن وہ ڈرائیور کو نہیں بچا سکے۔شام ہوتے ہی برف میں دفن ڈرائیور کی لاش دیکھی گئی۔ ایس ایچ او سونہ مرگ یونس رشید نے بتایا کہ اندھیرا ہونے کے باعث لاش کو باہر نکالنے میں کافی دشواریوں کا سامنا کرنا پڑا۔ادھرگریز کے تلیل سے ملحقہ گجران گاؤں میں برفانی تودہ دریا کشن گنگا میں گرگیا جس کے نتیجے میں پانی کا اخراج کچھ اوقات تک رک گیا ۔پانی کا بہائو رک جانے  سے دریا میں پانی کی سطح خوفناک طریقے سے بڑھ گئی ۔مقامی شہری خورشید احمد لون نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ گجران گاؤں کے قریب موجود پہاڑی سے بھاری بھر کم برفانی تودہ دریا کشن گنگا میں گرگیا اور پانی کا اخراج  رک گیا جس کے نتیجے میں پوری آبادی میں تشویش کی لہر دوڑ گئی۔ اس موقع پر سب ڈویڑنل مجسٹریٹ، انتظامیہ، مقامی پولیس اور فوج کی جانب سے پورے علاقے کی آبادی کو خطرے کے زمرے میں دیکھ کر خبردار کیا گیا۔ آبادی کو منتقلی کے احکامات بھی دیئے گئے ہیں۔ سب ڈویژنل مجسٹریٹ گریز مدثر احمد نے تصدیق کی کہ برفانی تودہ دریا کشن گنگا میں گرنے سے پانی سطح بڑھنے سے گجران گاؤں کو نگرانی میں رکھا گیاتھا۔