زاگی پورہ میں ’ تہری‘ کھانے کا نتیجہ

بڈگام// چرار شریف سے ملحقہ زاگی پورہ میں روایتی "تہری"کھانے کے بعد 39 افراد اچانک الٹیاں کرنے لگے اور ان پر غشی طاری ہوئی۔18افراد کو سرینگر منتقل کردیا گیا جبکہ دیگر چرار شریف سب ڈسٹرکٹ اسپتال میں زیر علاج ہیں۔ زاگی پورہ کے مقامی لوگوں نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ محلہ میں نئے مکان کی تعمیر کی جارہی تھی تو اس موقع پر مالک مکان نے روایتی’ تہری ‘ نماز جمعہ کے بعد عام لوگوں میںبا نٹی۔ تاہم تہری کھانے کے فوراً بعد درجنوں افراد دست اور قے کرنے لگے اور ان پر غشی طاری ہوگئی ۔ انہیں فوری طورپر سب ضلع ہسپتال چرار شریف منتقل کیا گیا اور انکی تعداد میں اضافہ ہوتا گیا۔۔ ابتدائی علاج ومعالجہ کے بعد 18بچوں سمیت دیگر افراد کو صدر ہسپتال اور بچوں کے ہسپتال جی بی پنتھ منتقل کر دیا گیا۔15بچوں کو جی پی پنتھ اور 3کو صدر اسپتال میں داخل کیا گیا جبکہ دیگر21کوچرار شریف کے سب ڈسٹرکٹ ہسپتال  میں ہی زیر علاج رکھا گیا۔چیف میڈیکل آفیسر بڈگام نے بتایا کہ ہسپتال میں جمعہ کے روز کل 39افراد کو لایا گیا جن میں زیادہ تر بچے تھے۔انہوں نے کہا کہ بظاہر انہیں (Food Poising)ہوئی تھی جس کی وجہ سے وہ دست اور قے کررہے تھے ۔انہوں نے کہا کہ 18 کو سرینگر منتقل کر دیا گیا تاہم ان میں سے کسی کی بھی حالت تشویشناک نہیں تھی ۔