ریت اور بجری نکالنے سے نالہ کی گہرائی میں اضافہ | آبپاشی ناممکن ،خمریال کپوارہ میںاحتجاج

کپوارہ// خمریال کپوارہ میں لوگو ں نے محکمہ جیو لوجی اینڈ مائنگ کے خلاف زور دار احتجاج کیا ۔لوگو ں نے الزام لگایا ہے کہ خمریال کے نزدیکی نالہ سے ریت اور بجری نکالنے کا کام عروج پر ہے اور جے سی بی مشین کے ذریعے ریت اور بجری نکالنے کے دوران نالہ کی گہرائی میں زبردست اضافہ ہوا ہے جس کی وجہ سے ان کے مکانوں کے سامنے بنائے گئے کنویں خشک ہوگئے ہیں اور وہ پینے کے پانی کی ایک ایک بوند کے لئے ترس رہے ہیں ۔منگل کی صبح کو خمریال کے لوگ اپنے گھرو  ں سے باہر آئے اور محکمہ جیولوجی اینڈ مائنگ کے خلاف زور داراحتجاج کیا ۔انہو ں نے الزام لگایا کہ نالہ لولاب سے ریت اور بجری نکالنے کے با جود بھی مذکورہ محکمہ خاموش تماشائی بن بیٹھا ہے ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ مذکورہ نالہ کی ہیت بھی تبدیل ہو چکی ہے اور اگر یہی صورتحال رہی تو ان کے رہائشی مکانو ں کو بھی شدید خطرہ لا حق ہے ۔احتجاج میں شامل لوگو ں کا یہ بھی کہنا تھا کہ گزشتہ کئی سالو ں کے دوران نالہ کی گہرائی  میں اضافہ ہونے کی وجہ سے ان کی دھان کی فصل بھی نہ بن سکی کیونکہ اس نالہ سے اُن کی دھان کی اراضی سیراب نہیں ہو پا رہی ہے اور اب لوگو ں نے گزشتہ دو سالو ں کے دوران اس دھان کی اراضی پر مکی کا فصل کاشت کی ۔لوگو ں کا کہنا ہے کہ جن لوگو ں کو اس نالہ سے ریت اور بجری نکالنے کے لئے محکمہ جیو لوجی اینڈ مائنگ نے اجازت نامہ دیا ہے، وہ وقت کے پابند نہیں ہیں بلکہ شام دیر گئے بلکہ رات کے دوران بھی اس نالہ سے ریت اور بجری نکال کر نالہ کی گہرائی  میں اضافہ کرنے میں کوئی بھی کسر باقی نہیں رکھتے ہیں ۔مقامی لوگو ں کا مزید کہنا ہے کہ سوموار کی شام دیر گئے لوگو ں کی ایک بڑی تعداد نالہ پر پہنچ گئی اور مذکورہ ٹھیکیدار کو کہا کہ وہ دوران رات نالہ سے ریت اور باجری نہ نکالیں لیکن انہو ں نے نہیں مانا ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ وہ مذکورہ نالہ سے ریت اور بجری نکالنے کے خلاف نہیں ہیں بلکہ وہ یہ مطالبہ کر رہے ہیں کہ صبح 9بجے سے شام 4بجے تک اپنا کام کریں کیونکہ 4بجے کے بعد مشینوں کے شور سے ان کی زندگی اجیرن بن گئی ہے ۔اس حوالہ سے محکمہ جیو لوجی اور مائنگ نے بتایا کہ نالہ سے بجری اور ریت نکالنے والے ٹھیکیدارو ں کو صبح 9بجے سے شام پانچ بجے کا وقت مقرر ہے اور اگر اس کے باجود بھی وہ ریت اور بجری نکالنے کا کام جاری رکھیں گے تو مقامی لوگ محکمہ کو فوری طور مطلع کریں تاکہ ان کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔انہو ں نے کہا کہ وہ ہر روز نالہ کا دورہ کرتے ہیں تاکہ نالہ کی گہرائی میں اضافہ نہ ہو۔