رہبر تعلیم اساتذہ کا پانچویں روز بھی احتجاج

سرینگر//رہبر تعلیم اساتذہ مطالبات کو لے کر پانچویں روز بھی احتجاجی دھرنا جاری رکھتے ہوئے امسال یوم اساتذہ کو یوم سیاہ کے طور منانے کا اعلان کیا ہے۔ جموںو کشمیر سے تعلق رکھنے والے 40ہزار سے زائد استاتذہ ساتویں تنخواہ کمیشن کا مطالبہ کر رہے ہیں جوتاحال سرکار کی جانب سے منظور نہیں کیا گیا ہے۔رہبر تعلیم اساتذہ نے اپنے مطالبات کو لے کر سنیچر کو مسلسل پانچویں رو زپریس کالونی لالچوک میں احتجاجی مظاہرے کئے اور دھرنا دیا ۔ اس دوران سنیچر کی صبح رہبر تعلیم اساتذہ کی ایک بڑی تعداد صوبائی صدر راہی ارشاد کی قیادت میں پریس کالونی لالچوک میں جمع ہوئی اورمطالبات کو لے کر احتجاجی مظاہرے کئے راہی ارشاد نے کہاکہ ’ہم سرکار سے کوئی نیا مطالبہ نہیں کر رہے ہیں بلکہ ہم ساتویں تنخواہ کمیشن کا مطالبہ کر رہے ہیں جو پہلے ہی دیگر ریاستی ملازمین کو ملا ہے اور یہاں کوئی وجہ نہیںہے کہ سرکار ہمارے ساتویں تنخواہ کمیشن کو روک لے ۔انہوں نے کہا کہ ہم اپنے مطالبات حاصل کرنے تک اپنا احتجاج جاری رکھے گے۔انہوںنے کہاکہ امسال یوم اساتذہ کو پوری ریاست میں یوم سیاہ کے طور منانے کا اعلان کیا ہے ۔