رہائی کے اگلے روز یاسین ملک دوبارہ گرفتار

سرینگر // لبریشن فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک ،جنہیں10روز کی اسیری کے بعد رہا گیا گیا تھا کو ،اتوار کی سہ پہر جنوبی کشمیر کا دورہ کرنے کے بعد گرفتار کرلیا گیا ہے ۔یاسین ملک نے حالیہ دنوں میں جنوبی کشمیر میں فورسز کارروائیوں کے دوران ہوئی اموات کے سلسلے میں متاثرین کے ساتھ تعزیت پرسی کیلئے گئے تھے ۔فرنٹ ترجمان نے اس سلسلے میں تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا ہے کہ محمد  یٰسین ملک کے ساتھ نائب چیئرمین مشتاق اجمل، زونل آرگنائزر بشیر احمد کشمیری ، امتیاز احمد اور ارشاد احمد کو بھی گرفتار کرکے سنگم پولیس تھانے میں مقید کردیا گیا ہے ۔۔بیان کے مطابق گرفتاری سے قبل لبریشن فرنٹ چیئرمین نے ایک وفد کے ہمراہ جنوبی کشمیر کے کئی مقامات کا سفر کیا اور حال ہی میںجان بحق ہوئے معصومین نیز دوسرے متاثرہ خاندانوں سے ملاقات کی۔ یاسین ملک نے ہاکورہ کھڈونی جاکر وہاں مہلوک بچی عندلیب جان، شاکر احمد کھانڈے اور ارشاد احمد لون ،جو 7 جولائی 2018 کوفورسز کی راست فائرنگ سے جاں بحق ہوئے تھے، لواحقین سے ملاقات کی اور ان غمزدہ خاندانوں کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا۔ اس کے بعد وہ گاسپور ہ وانپوہ پہنچے  یاور احمد ڈار کے غم سے نڈھال خاندان سے ملاقات کی۔ اس کے بعد یاسین ملک اور اراکین وفد نے براکپورہ اسلام آباد (اننت ناگ) کا دورہ کیا اور شیراز احمد کے خاندان سے ملاقات کی، جو عید کے روز (16 جون، 2018) کو فوج کی گولیوں کا نشانہ بنے۔ یاسین ملک نے یہاں بھی غمگین خاندان کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا۔ اس کے بعد جے ایل ایل ایف چیئرمین نوشہرہ سری گفوارہ بجبہاڑہ پہنچے جہاں محمد یوسف راتھرکے تباہ حال خاندان سے ملاقات کی  جسے فوج نے اسکی بیوی کے ہمراہ اندھا دھند گولیوں کا نشانہ بنایا جس سے وہ خودجان بحق جبکہ انکی بیوی زخمی ہوگئیں تھیں اور ابھی تک زیر علاج ہیں۔ فرنٹ چیئرمین اس علاقے کے دوسرے متاثرین سے بھی ملے کہ جن کے رہائشی مکانات کو فورسز نے اپنی بمباری یا آتش زنی کا نشانہ بناکر مسمار کررکھا ہے اور یوں کئی کنبوں کو کھلے آسمان تلے لاکھڑا کیا ہے۔ترجمان کے مطابقمتاثرین کی دلجوئی اور تعزیت پرسی کے بعد فرنٹ چیئرمین اور دوسرے اراکین وفد سرینگر کی جانب واپس ہورہے تھے کہ سنگم کے نزدیک پولیس نے ان کی گاڑی کو روک کو اسکا گھیرائو کرلیا۔ پولئس نے آناً فاناً یاسین صاحب اور دوسرے اراکین وفد کو گرفتار کیا اور انہیں پولیس اسٹیشن سنگم میں مقید کردیا۔