رکن پارلیمنٹ کا قابل اعتراض بیان | لوک سبھا میں ہنگامہ، ایوان کی کارروائی دوپہرتک ملتوی

یو این آئی

نئی دہلی//لوک سبھا میں بدھ کو دراوڑ منیترا کزگم (ڈی ایم کے ) پارٹی کے رکن پارلیمنٹ سینتھل کمار کے قابل اعتراض بیان کے خلاف ہنگامہ ہوا، جس کی وجہ سے ایوان کی کارروائی دوپہر 12 بجے تک ملتوی کر دی گئی۔ایوان کی کارروائی سروع ہوتے ہی ڈی ایم کے رکن پارلیمنٹ کے قابل اعتراض بیان پر حکمراں جماعت کے اراکین معافی مانگنے کا مطالبہ کرتے ہوئے نعرے بازی کرنے لگے ۔ اسی دوران وقفہ سوالات شروع ہو گیا۔ جس کے بعد حکمراں جماعت کے اراکین پرسکون ہوگئے اور ایوان کی کارروائی خوش اسلوبی سے چلنے لگی۔ ایوان کی کارروائی تقریباً چالیس منٹ تک خوش اسلوبی سے جاری رہی۔ دریں اثنا، ڈی ایم کے کے ٹی آر بالو نے وقفہ سوالات کے دوران اپنی بات پیش کرنے کی کوشش کی تبھی حکمراں جماعت کے کچھ اراکین پارلیمنٹ نے دوبارہ قابل اعتراض بیان پر معافی کا مطالبہ کرنا شروع کردیا۔ دوسری طرف ڈی ایم کے ممبران بھی اپنی جگہ سے کھڑے ہو گئے اور ہنگامہ کرنے لگے ۔لوک سبھا کے اسپیکر اوم برلا نے حکمراں جماعت اور اپوزیشن اراکین کے درمیان بڑھتے ہوئے شوروغل کو دیکھتے ہوئے ایوان کی کارروائی دوپہر 12 بجے تک ملتوی کر دی۔