روہنگیائی مسلمانوں کے قتل عام پر اقوام عالم کی خاموشی افسوسناک: مزاحمتی خیمہ

 سرینگر// حریت(گ)، متحدہ مجلس علماء ، اتحاد المسلمین ، جمعیت علماء اہلسنت والجماعت ، پیپلز فریڈم لیگ، لبریشن فرنٹ (حقیقی)، حریت (جے کے) ،انجمن علماء و ائمہ مساجد جنوبی کشمیر،مسلم لیگ،امت اسلامی نے میانمار میں روہنگیائی مسلمانوں کی بے رحمانہ اور بے دریغ طریقہ سے نسل کشی کیخلاف کشمیرمیں کئے گئے احتجاجی مظاہروں اور یکجہتی و ہمدردی کا اظہار کرنے کے لیے سراہنا کرتے ہوئے عالمی اداروںکی خاموشی پر سخت تشویش کااظہار کیا ہے۔ حریت (گ) چیئرمین سید علی گیلانی نے رونگہیائی مسلمانوں کے ساتھ یکجہتی اور ہمدردی کا اظہار کرنے کے لیے ریاست بھر میں نکالے گئے جلسے جلوسوں میں بھاری عوامی شرکت کو خراج تحسین ادا کرتے ہوئے کہا کہ بحیثیت ایک مظلوم قوم کے ہم رونگہیائی مسلمانوں کے ساتھ ساتھ دنیا کے دوسرے خطوں میں بلالحاظ مذہب وملّت مظلومین کے درد کی کسک محسوس کرتے ہیں۔ گیلانی نے کہا کہ حکومت برما کی سربراہ نوبل انعام یافتہ آنگ سن سوچی کی طرف سے رونگہیائی مسلمانوں کی وسیع پیمانے پر قتل وغارت اور نقل مکانی جیسے سنگین جنگی جرائم کو کشمیر سے جوڑنے کے بجائے اِسے انسانی نکتہ نگاہ سے پرکھ لینا چاہیے۔ انہوں نے رونگہیائی مسلمانوں کے قتل وغارت کے خلاف لگائے گئے پُرامن احتجاجی مظاہروں پر پولیس انتظامیہ کی طرف سے بے تحاشا لاٹھی چارج اور طاقت کے بے جا استعمال کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مظلومین کے حق میں صدائے احتجاج بلند کرنا ہر انسان کا جمہوری اور اخلاقی حق ہے۔ ادھر متحدہ مجلس علماء نے مظلوم روہنگیائی مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی ،وہاں مسلمانوں کے قتل عام کو رکوانے اور انہیں تحفظ فراہم کرانے کیلئے جمعہ کو عملاً یکجہتی کے اظہار کے ساتھ ساتھ عالمی برادری خاص طور پر OIC کی فوری توجہ مبذول کرانے کیلئے قرارداد مرتب کیں۔ قرارداد میں کہاگیاکہ مسلمانان کشمیر کا یہ اجتماع برما میں روہنگیائی مسلمانوں کیخلاف پُر تشدد کارروائیوں جس کے نتیجے میں ہزاروں مسلمانوں کو قتل ، سینکڑوں بستیوں کو تاراج ، عورتوں کی بے حرمتی اور لاکھوں مسلمانوں کو شدید زخمی کیا گیا کی شدید مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ اس قتل عام کو رکوانے کیلئے اپنا کردار ادا کرے ۔یہ اجتماع روہنگیائی مسلمانوں کیخلاف جاری جارحیت اور پُر تشدد کارروائیوںکو وہاں کے مسلمانوں کی ایک منصوبہ بند نسل کشی قرار دیتا ہے اورحقوق البشر کے عالمی اداروں سے پُر زور مطالبہ کرتا ہے کہ وہ میانمار میں مسلمانوں کی منصوبہ بند نسل کشی اور عزت و آبرو کو پامال کرنے کی مذموم کوششوں کا سنجیدہ نوٹس لیں اور قتل و غارت گری کے یہ واقعات رکوانے کیلئے اپنا موثر کردار ادا کریں۔یہ اجتماع OIC کے تمام ذمہ دار ممالک خصوصاً بااثر اسلامی ممالک کے سربراہوں پر زور دیتا ہے کہ وہ روہنگیائی مسلمانوں کے قتل عام کو روکنے کیلئے حکومت برما پر دبائو ڈالیں اور جس بے دردی کے ساتھ وہاں مسلمانوںکا قتل عام جاری ہے اس کو رکوانے کیلئے فوراً سے پیشتر عملی اقدامات اٹھائیں ۔یہ اجتماع روہنگیائی مسلمانوں کیخلاف ڈھائے جارہے مظالم کی پُرزور مذمت کرتا ہے اور انہیں یقین دلاتا ہے کہ اس مصیبت اور آزمائش کی گھڑی میں پوری کشمیری قوم ان کے ساتھ ہے ۔اس دوران اتحاد المسلمین کے صدر مولانا مسرور عباس انصاری نے میانمار کے مظلوم مسلمانوں پر ڈھائے جا رہے مظالم ، قتل و غارت اور بستیاں خاکستر کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری پر زور دیا ہے کہ وہ رونگیائی مسلمانوں کے خلاف جاری پر تشدد کاروائیوں پر روک لگانے کیلئے عملی اقدامات کریں۔جمعیت علماء اہلسنت والجماعت کے سکریٹری مولانا شیخ عبدالقیوم قاسمی مہتمم دارالعلوم شیری بارہمولہ نے بدھسٹ دہشت گردوں کے ہاتھوں میانمار میں روہنگیائی مسلمانوں کے قتل عام پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اس قتل عام کی مذمت کی اور عالم اسلام کے رہنماؤں سے اپیل کہ اب وقت آگیا ہے کہ عالم اسلام ظلم وبربریت کے خلاف متحد ہوکر مسلمانوں کے تحفظ کے بارے میں کوئی راست اقدام کریں۔ پیپلز فریڈم لیگ کے ترجمان نے اس ننگی جارحیت اور بستیاں خاکستر کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری پر زور دیا ہے کہ وہ رونگیائی مسلمانوں کے خلاف جاری پر تشدد کاروائیوں پر روک لگانے کیلئے عملی اقدامات کریں۔لبریشن فرنٹ (ح) چیئرمین جاوید احمد میر نے کہا کہ امریکہ یورپ ، اقوام متحدہ برما میں جاری دہشت گردی سے کیوں منہ پھیر رہا ہے جب کہ معصوم بچوں عورتوں ، نوجوانوں کو بھیڑ بکریوں کی طرح بدھشٹ دہشت گرد مسلمانوں کوذبح کر رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ایسے واقعات کسی مسلم ممالک میں ہوتے تو امریکہ یورپ نے دہشت گردی کا لیبل چسپاں کر کے اپنی افواج کو وہاں روانہ کیا ہوتا ۔ حریت (جے کے )کے کنوینر اور مسلم کانفرنس چیئرمین شبیر احمد ڈار، محاز آزادی صدر محمد اقبال میر، انٹرنیشنل فورم فار جسٹس چیئرمین محمد احسن اونتو، ینگ مینز لیگ چیئرمین امتیاز احمد ریشی اور تحریک استقامت چیئرمین غلام نبی وار نے مشترکہ بیان میں بدھسٹ دہشت گردوں کی جانب سے روہنگیا کے مسلمانوں کے قتل عام پر سخت غم کا اظہار کیا اور میانمار کے حکام سے کہا کہ وہ اقلیتی فرقوںکے قتل عام کو روکنے میںاپنے منصبی فرائض کو پورا کریں ۔انجمن علماء و ائمہ مساجد جنوبی کشمیرکے امیر و مہتمم دارالعلوم سیدالمرسلین چوگام حافظ عبدالرحمان اشرفی، نائب امیر مفتی توصیف احمد قاسمی، سیکریٹری جنرل مفتی شیراز احمد قاسمی سرپرست مفتی محمد قاسم قاسمی نے مشترکہ بیان میں ہلاکتوں پر گہری تشویش کااظہار کرتے ہوئے مسلم حکمرانوں سے اپیل کی کہ وہ نسل کشی کو رکوانے کیلئے اقدامات کریں۔مسلم لیگ کے ترجمان سجاد ایوبی نے اننت ناگ (اسلام آباد )میں روہنگیائی مسلمانوں کے حق میں نکالے گئے پُر امن احتجاج کے دوران مولانا مشتاق احمد ویری اور نوجوانوں پروردی پوشوں کی طرف سے عتاب ڈھانے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسے اظہار رائے پر بزور قوت قدغن لگانے کے مترادف قرار دیا ہے ۔امت اسلامی کے چیئرمین میر واعظ قاضی یاسر نے 16ہزار رونگیائی مسلمانوں کوپنا ہ دینے پر بنگلہ دیش کی حکومت کا شکریہ ادا کیا ہے ۔انہوں نے برما کی حکومت کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ انسانی المیہ بن گیا ہے ۔انہوں نے مسلم ممالک سے اپیل کی ہے کہ وہ رہنگیا مسلمانوں کی مدد کیلئے سامنے آئیں ۔انہوں نے کہا کہ برما میں مسلمانوں پر مطالم ڈھائے جا رہے ہیںوہاں مسلمانوں کے گھر جلائے جا رہے ہیں ۔