رفیع آباد کے بیشتر دیہات میں بجلی کی کٹوتی شروع | لوگ برہم ،اعلیٰ حکام سے مداخلت کی اپیل

بارہمولہ // رفیع آباد بارہمولہ کے بیشتر دیہات میں بجلی کی کٹوتی سے لوگ کافی تنگ آچکے ہیں ۔ شام ہوتے ہی علاقے میںگھپ اندھیرا چھا جاتا ہے۔بڈن ،سیر پار ،رہامہ ،شتلوہ ،برندب ،چاٹوسہ ، گلبل،شلکوٹ ،برمن ،وترگام،وہلترہ،کھاموہ ،ہدی پورہ،ترکپورہ ،خوشی پورہ ،پانزلہ اور دیگر دیہات کے لوگوں کا کہنا ہے کہ وہ بجلی کی عدم دستیابی سے کافی تنگ آچکے ہیں ۔انہوںنے محکمہ بجلی پر الزام عائد کیا کہ اگرچہ وہ باقاعدگی کے ساتھ بجلی فیس بھی ادا کر رہے ہیں لیکن معقول بجلی سپلائی نہیں مل پارہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ میٹر نصب کرتے وقت وعدہ کیا گیا تھا کہ اب بجلی سپلائی میں غیر ضروری کٹوتی نہیں ہوگی لیکن وہ وعدہ بھی سراب ثابت ہوا ۔مقامی لوگوں نے محکمہ بجلی کے خلاف برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہیں سخت پریشانیوں کا سامنا ہے بالخصوص اُن کے بچوں کو سخت دقتوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔لوگوں نے گورنر انتظامیہ اور متعلقہ محکمہ کے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ ان علاقوں میں فوری طور پر بجلی سپلائی کو یقینی بنایا جائے۔