راہل گاندھی وعدے کے پکے ہیں:طارق انور

نئی دہلی// کانگریس پارٹی کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر طارق انورنے کہا کہ وقت آ گیا ہے کہ 2019 کے لوک سبھا انتخابات کو دیکھتے ہوئے تمام معاشرے کے لوگ متحد ہوکر بی جے پی جیسی فرقہ پرست پارٹی کا مقابلہ کریں۔بی جے پی نے گزشتہ 5 برسوں میں جس طرح سماج کو ہر سطح پر پیچھے دھکیلا ہے وہ انتہائی افسوسناک ہے ۔ آج یوتھ بے روزگار ہے ، ہر طرف ہاہاکار ہے ، کوئی آدمی چاہے وہ کسی بھی جماعت یا ادارے کا ہومحفوظ نہیں ہے ، لوگوں کو سڑک پر مار دیا جارہا ہے ۔پولس کے قتل کے ملزم آزاد گھوم رہے ہیں اور گائے کے قتل کے ملزمان پر مقدمات عائد کئے جارہے ہیں۔دلتوں مسلمانوں اور پسماندہ لوگوں پر ظلم ہو رہا ہے ، اس لئے سب کو متحد ہونا چاہئے ۔ انہوں نے اپنی رہائش گاہ پر اپنی سالگرہ کے موقع پر دہلی پردیش قومی تنظیم ،اترپردیش قومی تنظیم ہریانہ پردیش قومی تنظیم اوریوتھ کانگریس سمیت کئی اداروں کے ذمہ داران اور کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مجھے امید ہے کہ لوگ بی جے پی جیسی فرقہ پرست پارٹی کو 2019 میں منہ توڑ جواب دیں گے اور وہ اپنی باری کا انتظار کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ لوگوں کا کانگریس صدر راہل گاندھی میں اعتماد بحال ہوا ہے اور وہ ان کو ایک ایسے لیڈر کے طور پر دیکھ رہے ہیں جو ایفائے عہد کرنے والا ہے ۔ چوکیدار کی طرح جملہ باز ، جھوٹے وعدے کرکے لالی پاپ دینے والا نہیں ہے ۔ راہل گاندھی نے اپنی شبیہ ایک ایسے رہنما کے طور پر بنائی ہے جو کہنے سے زیادہ کرنے میں یقین رکھتے ہیں اور آج اگر غریب مزدور اور کسان کے مسیحا کے طو ر پر راہل گاندھی سامنے آئے ہیں اور مذکورہ لوگوں کو کانگریس پارٹی کی پالیسیوں سے راحت میسر ہوئی ہے ۔انہوں نے کہا کہ منریگا سے لیکر غریب کو روزگار، سب کو تعلیم کا قانون کانگریس پارٹی ہی لے کر آئی ہے اور 2019 میں کانگریس پور ی قوت سے فرقہ پرستوں کو منہ توڑ جواب دے گی۔ اس موقع پر دہلی پردیش قومی تنظیم کے صدر عبد السمیع سلمانی، فضل مسعود ، راجہ انصاری، حکیم ایاز ہاشمی، بلال احمد یوتھ کانگریس، حاجی عارفین منصوری (قومی صدر منصوری سماج) ، شریف احمد ادریسی ،طاہر بھائی، چودھری شریف احمد رکن دہلی وقف بورڈ سمیت سینکڑوں کی تعداد میں لوگوں نے کیک کاٹ کر اپنے محبوب لیڈر طارق انور کو مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ طارق انور کی قیادت میں ملک نے کئی بڑی کامیابیاں حاصل کی ہیں۔انہوں نے کہا کہ طارق انور نے ہمیشہ دبے کچلے غریب ، پسماندہ اور محروم سماج کے لوگوں کیلئے آواز بلند کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ٹاڈا کے خلاف آواز بلند کرنے کا معاملہ ہو یا بابری مسجد کے حق میں آواز بلند کرنے کا معاملہ ہو ہمیشہ طارق انور نے اپنی آواز پوری قوت کیساتھ بلند کی ہے اور قومی تنظیم کے اجلاس میں وقت کے وزیر اعظم نرسمہا راؤ نے بابری مسجد کو دوبارہ بنانے کا وعدہ کیاتھا ۔یو این آئی