راولپورہ کے دوافروش کی یاد میں تعزیتی تقریب

سرینگر//16سال قبل لاپتہ ہوئے راولپورہ کے دوافروش منظور احمد ڈارکی یاد میں جمعہ کو علاقہ میں مکمل ہڑتال رہی اور لوگوں نے لواحقین کے حق میں انصاف کیلئے نعرہ بلند کئے ۔ہڑتال کی وجہ سے دکانیں اور دیگر کاروباری ادارے بند رہے اس دوران گاڑیوں کی آمد ورفت میں بھی کچھ وقت تک خلل پڑا ۔ احتجاجی مظاہرین مطالبہ کر رہے تھے کہ ملوثین کو سزاد دی جائے اس دوران منظور احمدڈار کی یاد میں ایک دعائیہ مجلس کا اہتمام کیا گیا جس میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی ۔واضح رہے کہ منظور احمد کو 18جنوری2002کو نامعلوم فورسز نے راولپورہ سے کیا تھا اور اس سلسلے میں پولیس اسٹیشن صدر میں ایک ایف آئی آرزیر دفعہ364 کے تحت فوج کی 35راشٹریہ رائفلز کے خلاف درج کیا گیا تھا۔منظور احمد ڈار کی بیٹی نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ہم انصاف کیلئے در در کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں اُس کا کہنا تھا کہ ہم نے کئی بار یہ مطالبہ دہرایا کہ اگر اُن کے والد کو اگر جان بحق کیا گیا ہے تو انہیں اُن کی قبر دکھائی جائے ۔انہوں نے کہا کہ ہم انصاف کیلئے مرتے دم تک لڑتے رہیں گے ۔