رام پورہ کیموہ میں دوران شب فورسز کی یلغار

کولگام/ /کولگام کے کھڈونی اور کیموہ میں فورسز کی طرف سے حزب جنگجو کے اہل خانہ پرمبینہ شبانہ یلغار اور توڑ پھوڑ کے بعد مظاہرین پر ٹیر گیس شلنگ کے خلاف مکمل ہڑتال رہی،جس کے دوران دوکانیں اور ٹرانسپورٹ بند رہا،جبکہ سنگبازی کے واقعات بھی رونما ہوئے۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ26اور27 جولائی کی رات فورسز کی ایک جماعت رام پورہ کیموہ نامی گائوں میںحزب جنگجو توصیف شیخ کے گھر میں دیواروں کو پھاندتے ہوئے داخل ہوئی۔ اس موقعہ پر اہل خانہ نے شور مچایا،جس کے ساتھ ہی پڑوس  کے لوگ اور ہمسایہ اپنے گھروں سے باہر آئے اور انہوں نے نعرے بازی شروع کی۔مقامی مسجد کے لوڈ اسپیکروں سے بھی اعلان کیا گیا،جس پر پورا علاقہ جمع ہوا،اور فورسز کی کارروائی کے خلاف احتجاجی مظاہرے شروع ہوئے۔ مظاہرین نے فورسز پر سنگبازی کی،جبکہ فورسز نے ٹیر گیس کے گولے داغے،اور ہوا میں گولیوں کی کئی رائونڈ بھی چلائے گئے،جس کے بعد فورسز اہلکار علاقے سے چلے گئے۔مقامی لوگوں کے مطابق اس صورتحال سے پورے علاقے میں تنائو اور کشیدگی کا ماحول پیدا ہوا،اور ابھی لوگ سنبھل ہی رہے تھے کہ اچانک رات کے3بجے ایک مرتبہ پھر فورسز اہلکار علاقے میں پہنچ گئے اور ایک بار پھرحزب جنگجو توصیف شیخ کے گھر میں داخل ہوئے۔فورسز اہلکاروں نے مکان کے چاروں طرف زبردست شلنگ کی جس کے بعد وہ مکان کے اندر داخل ہوئے۔اہل خانہ کا کہنا ہے کہ گھر میں داخل ہوتے ہی توڑ پھوڑ کرنے کا سلسلہ شروع کیا گیا اور اس دوران جو بھی انکے راستے میں آیا اس کو تختہ مشق بنادیا،یہاں تک خواتین کو بھی بخشا نہیں گیا۔انہوں نے بتایا کہ3برس کی بچی سمیت15 دن قبل زچگی سے فارغ ہوئی ایک خاتون کا بھی زد کوب کیا گیا۔اس دوران صبح یہ خبر جب علاقے میں پھیل گئی تو وہاں مکمل ہڑتال کی گئی اور لوگ گھروں سے باہر آکر احتجاج کرنے لگے۔ اہل علاقہ نے پہلے رام پورہ چوک میںکولگام،شوپیاں روڑ بند کیا اور گاڑیوں کی نقل و حرکت روکی،اور بعد میں اسلام و آزادی کے نعرے لگاتے ہوئے کیموہ کی طرف مارچ کیا۔ کیموہ میں دوکانیں بند ہوئیںجبکہ مظاہرین نے نجی گاڑیوں پر سنگبازی کی،جس کی وجہ سے اس روڑ پر گاڑیوں کی آمدرفت بند ہوئی،اور کئی گاڑیوں کے شیشے بھی ٹوٹ گئے۔نوجوانوں نے کیموہ چوک میں رکاوٹیں بھی کھڑی کیں۔بعد میں احتجاجی مظاہرین نے کھڈونی تک مارچ کیا اور نعرہ بازی کی جبکہ کھڈونی چوک میں بھی نجی گاڑیوں کو پتھرائو کا نشانہ بنایا گیا۔نوجوانوںنے موتل ہامہ کے مقام پر سڑکوں پر رکاوٹیں کھڑی کرتے ہوئے دھرنا دیا جس کی وجہ سے اننت ناگ کولگام روڑ بند ہوا۔ہڑتال کی وجہ سے ان علاقوں میں عام زندگی معطل ہو کر رہ گئی۔