رام ناتھ کووند کا ہریانہ میں چوتھی زرعی قیادت

گنور// صدر جمہوریۂ ہند رام ناتھ کووند نے آج (17فروری 2019کو) گنّور، سونی پت میں حکومت ہریانہ کے ذریعے منعقدہ چوتھی زرعی قیادت سربراہ کانفرنس کی اختتامی تقریب میں شرکت کی اور اس سے خطاب کیا۔ انھوں نے ہریانہ کسان رتن پرسکار اور ہریانہ کرشی رتن پرسکار بھی پیش کئے ۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے صدر جمہوریہ نے کہا کہ ’’تین روز قبل جموں اور کشمیر میں ایک دہشت گردانہ حملے میں ہمارے چند جوانوں نے اپنی جان گنوائی ہے ۔ ہر ایک ہندوستانی کے ساتھ میں اس وحشیانہ جرم کی مذمت کرتا ہوں۔ پورا ملک غمزدہ خاندانوں کے غم میں شریک ہے ۔ ملک کی جانب سے میں اپنے بہادر فوجیوں اور حفاظتی اہلکاروں کے تئیں ممنونیت کا اظہار کرتا ہوں‘‘۔صدر جمہوریہ نے کہا کہ ہریانہ کے عوام اور یہا ں کی حکومت اس ریاست کی مجموعی ترقی کے لیے کوششیں کر رہی ہے جن میں کاروبار کرنے کی آسانی میں اضافہ اور سماجی اشاریوں مثلاً بچوں کے صنفی تناسب کو بہتر بنانا شامل ہیں۔ زراعت میں جدید 21ویں صدی کی ٹیکنالوجی کو اختیار کرنا اسی عمل کا ایک حصہ ہے ۔ صدر جمہوریہ نے کہا کہ ایسے اقدامات سے کسانوں کو فائدہ پہنچے گا۔ انھوں نے اپیل کی کہ زراعت کو وسیع صنعتی ضمن میں دیکھا جائے اور روایتی زراعت کو مفید زراعت کے سلسلے سے منسلک کیا جائے ۔صدر جمہوریہ نے کہا کہ ہریانہ میں کسان ریاستی حکومت کی مدد سے کھونٹی اور فصل کی کٹائی کے بعد بچے رہ جانے والے حصے کے انتظام کے لیے نئے طریقے اختیار کر رہے ہیں۔ انھوں نے اس اعتماد کا اظہار کیا کہ کھونٹی کو جلانے سے ہونے والی آلودگی کے مسئلے کا کوئی حل تلاش کرنے میں کسان مدد کریں گے ۔یو این آئی۔