راشن کی کٹوتی اور بجلی فیس میں اضافہ عوام کیلئے پریشان کن

سرینگر//عوام کو بنیادی اور لازمی خدمات سے مسلسل محروم رکھنے پر زبردست تشویش کا اظہار کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس کے سینئر لیڈر عبدالرحیم راتھر اور خواتین ونگ کی ریاستی صدر شمیمہ فردوس نے کہا ہے کہ ایک منصوبہ بند سازش کے تحت یہاں کے عوام کیساتھ ناروا سلوک روا رکھا جارہا ہے۔ جو سہولیات ماضی میں عوام کو خود بہ خود میسر رہا کرتی تھیں آج لوگ اُن ہی سہولیات کیلئے احتجاج کرنے پر مجبور ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہاں پہلے ہی راشن کی قلت سے لوگ پریشان تھے کہ اب راشن کے کوٹا میں مزید کٹوتی کی گئی ہے۔ اُن کا کہنا تھا کہ راشن گھاٹ خالی ہیں جس سے عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔انہوں نے الزام لگایاکہ بجلی فیس میں غیر اعلانیہ اضافے کے باوجود بھی بجلی کی بدخلل سپلائی کانام ونشان نہیں ہے، پینے کے پانی کیلئے لوگوں ہاہاکارمچارہے ہیں۔انہوں نے مزیدکہا کہ شہروں اور قصبو ں میں لوگ حکومتی بے حسی کاشکار ہیں جبکہ پہاڑی اور دوردراز علاقوں کے لوگوں کا خدا ہی حافظ ہے۔انہوں نے کہاکہ حکومت کی نااہلی کی وجہ سے لوگوں کو زبردست مشکلات کا سامنا ہے ۔غذائی اجناس کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے لیکن انتظامیہ کی طرف سے قیمتوں کو اعتدال میں رکھنے، ذخیرہ اندازوں اور ناجائزہ منافع خوروں کیخلاف کارروائی کرنے کا کوئی بھی اقدام دیکھنے کو نہیں مل رہا ہے نیز حکومت لوگوں کے مسائل و مشکلات کی تماشائی بن کر رہ گئی ہے۔ پارٹی لیڈران نے کہا کہ ٹھٹھرتی سردی میں بھی حکومت کی طرف سے لوگوں کو راحت نہیں مل رہی ہے۔