راج بھون میں متعدد وفود گورنر سے ملاقی،پیش کئے گئے مطالبات کو حل کرنے کی یقین دہانی

 جموں//راج بھون جموں میں گورنر ستیہ پال ملک سے سابق ممبر اسمبلی سمیت کئی وفود ملاقی ہوئے اور مطالبات کو حل کرنے کی مانگ کی۔ لداخ مسلم کاڈی نیشن کمیٹی لیہہ کا ایک وفدصدر انجمن معین الاسلام لیہہ ڈاکٹر عبدالقیو م کی قیادت میں گورنر ستیہ پال ملک سے ملاقی ہوا۔وفد نے مطالبات کا ایک چارٹر گورنر کو سونپا جن میں لداخ خود مختار پہاڑی ترقیاتی کونسل لیہہ کی نشستوں کی از سر نو حد بندی کرنا ، لیہہ او رکرگل ضلع کے اقلیتوں کیلئے ایم ایل سی نشستیں مخصوص رکھنا اور کئی دیگر مطالبات شامل تھے۔گورنر نے مطالبات غور سے سنے اور یقین دلایا کہ ان پر ہمدردانہ غور کیا جائے گا۔ادھر کرگل ضلع سے تعلق رکھنے والا ایک وفد ایم ایل سی وکر م رندھا وا کی قیاد ت میں راج بھون میں گورنر سے ملاقی ہوا۔وفد نے مطالبات کی ایک فہرست گورنر کو پیش کی جن میں لداخ کو ڈویژنل سٹیٹس دینا ، زوجیلہ ٹنل کی از سر نو ٹینڈرنگ ، کرگل ہوائے اڈے کے توسیعی کام کو جلد ازجلد مکمل کرنا ، کرگل میں سینٹرل یونیورسٹی قائم کرنا ، کئی سڑک پروجیکٹ جلد از جلد مکمل کرنا ، سرکاری سکولوںکو بڑھاوا دینا اور کئی مطالبات شامل تھے۔گورنر نے وفد کو یقین دلایا کہ ان کی طرف سے اجاگر کئے گئے مطالبات پر کارروائی عمل میںلائی جائے گی ۔انہون نے وکرم رندھا وا پر زور دیا کی وہ عوامی بہبودی کے کام جاری رکھیں۔سابق وزیر اور سابق ایم ایل اے جی ایم سروری نے گورنر کے ساتھ ملاقات کی۔انہوںنے گورنر کو اندروال حلقے کے ترقیاتی منظرنامے کے بارے میں جانکاری دی ۔انہوں نے کہراہ ،ملانو اور بنجانہ میں ڈگری کالج کھولنے ، ٹھاٹھری کے لئے پی ڈبلیو ڈی کا خصوصی سب ڈویژن منظور کرنے اور کئی دیگر مطالبات غورکے سامنے رکھے۔گورنر نے جی ایم سروری پر زور دیا کہ وہ اندروال حلقے کی ترقی اور عوامی بہبود کو یقینی بنانے کے لئے اپنی کوششیں جاری رکھیں۔اس دوران سرینگر میونسپل کارپوریشن کے کارپوریٹروں کا ایک وفد ڈپٹی میئر ایس ایم سی شیخ محمد عمران کی قیادت میں راج بھون میں گورنر سے ملاقی ہوا۔وفد نے گورنر کو ایس ایم سی کے ترقیاتی معاملات سے جڑے امور اور عوامی اہمیت کے کئی مطالبات گورنر کی نوٹس میں لائے ۔وفد نے کارپوریٹروں کو رہائشی سہولیت اور سیکورٹی فراہم کرنا ، ماہانہ مشاہرے میں اضافہ کرنا ، ڈل جھیل کے اطراف کو خوبصورت بنانا اور شہر سری نگر میں پی یو بی جی گیم پر پابندی لگانے کا بھی مطالبہ کیا۔ گورنر نے وفد کو یقین دلایا کہ ان کے مطالبات پر غور کیا جائے گااور انہیں پورا کرنے کے لئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیں گے۔کشتواڑ ضلع کے پاڈر علاقے سے تعلق رکھنے والے سرپنچوں کے ایک وفد نے سابق وزیر اور سابق ایم ایل اے سنیل شرما کی قیادت میں گورنر کے ساتھ ملاقات کی ۔وفد نے علاقے میں ڈگری کالج منظور کرنے اور ڈاکٹروں کی تعیناتی کے لئے گورنر کا شکریہ ادا کیا۔وفد نے مطالبات کی یک فہرست بھی گورنر کو پیش کی جن میں ایم جی نریگا کی رقومات کی واگزاری ، پنچایتی گھروں کی تعمیر ، تعلیمی اداروں میں اساتذہ کی تعیناتی ، سب ضلع ہسپتال میں اسامیاں وجود میںلانے اور کئی دیگر مطالبات شامل تھے ۔گورنر نے وفد کو یقین دلایا کہ ان کے مطالبات جلد از جلد پورے کئے جائیں گے۔گورنر نے سنیل شرما پر زور دیا کہ وہ عوامی بہبود اور علاقے کی ترقی کے کا م جاری رکھے۔شیر کشمیر یونیور سٹی آف ایگریکلچر سائنسزاینڈ ٹیکنالوجی ٹیچنگ ایسو سی ایشن جموں کے صدرڈاکٹر وکاس شرما  کی قیادت میں وفد گورنر کے ساتھ ملاقی ہوا۔ وفدنے یونیورسٹی میں مشتہر کی گئی مختلف اسامیوں کے لئے سلیکشن عمل جلد از جلد مکمل کرنے ، سکاسٹ جے کے لئے نئی فیکلٹی منظور کرانے ، یونیورسٹی میں سی اے ایس کی عمل آوری ، یونیورسٹی قوانین کے مطابق ایڈہاک ازم کو دور کرنے ، تدریسی و غیر تدریسی اسامیوں کو جلد پُر کرنے اور یونیورسٹی میں سریکلچر ڈویژن کی بحالی جیسے مطالبات گورنر کے سامنے رکھے ۔گورنر جو سکاسٹ جموں کے چانسلر بھی ہیں نے کہا کہ ان معاملات کا جائزہ لیا جائے گااور ان پر ضروری کارروائی عمل میںلائی جائے گی۔ڈاکٹر وویک آریہ ، ڈاکٹر پی کے رائے ،ڈاکٹر ہریش شرما اور ڈاکٹر اشوک کمار بھی وفد میںشامل تھے۔جے اینڈ کے سکھ یوتھ آرگنائزیشن کے چیئرمین ایس امن جیت سنگھ کی قیادت وفد گورنر کے ساتھ ملاقی ہوا ۔وفد نے سکھ برادری کے کئی معاملات کو اُجاگر کیا جن میں کنجونی چوک میں بابا بنڈا سنگھ بہادر کا مجسمہ نصب کرنا ، گول گجرال میں ہاکی سٹیڈیم تعمیر کرنا ،گول گجرال کو ماڈل ولیج کے طور پر مکمل طور سے ترقی دینا ، سکولوں میں پنجابی زبان متعارف کرنا ، کشمیر صوبے میں پنچوں اور سرپنچوں کو سیکورٹی فراہم کرنا اور سکھ طبقے کو فیصلے سازی کے اداروں میں مناسب نمائندگی دینا جیسے مطالبات شامل تھے۔گورنر نے وفد کو یقین دلایاکہ ان کے جائزہ مطالبات پر ہمدردانہ غور کیا جائے گا۔ترتُک نوبرا علاقے کے سرپنچوں کا ایک وفد سماجی کارکن غلام حسین کی قیادت میں گورنر سے ملاقی ہوا ۔وفد نے ریاست میں پنچایتی انتخابات آزادانہ اور منصفانہ طریقے پر منعقد کرنے کے لئے گورنر کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے ریاست میں پنچایتی راج نظام کومزید استحکام بخشنے کے لئے گورنر سے اپیل کی۔وفد نے گورنر کے سامنے اپنے مطالبات کی ایک فہرست پیش کی۔گورنر نے وفد کو یقین دلایا کہ ان کے مطالبات پر غور کیا جائے گا ۔محمد سلمان سرپنچ ، ترتُک فارول، عنایت اللہ سرپنچ ترتُک یول ، محمد موسیٰ سرپنچ بوگ ڈنگ ، محمد ابراہیم چیئرمین یکشی نوبرا ، صدر بولتی سٹوڈنٹس ایسو سی ایشن لداخ عبدالقادر وفد میں شامل تھے۔