راجوری کے تاجر کی حراستی موت

جموں//راجوری سے تعلق رکھنے والے ایک شہری کی مبینہ طور پر پولیس حراست کے دوران  موت واقع ہوئی جسکی مجسٹریل انکوائری کے احکامات صادر کئے گئے ہیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ منگل کے روز سانبہ کے سپوال علاقے  میں پولیس نے کپڑے کے تاجر کے ساتھ ڈھابے پر کھانا کھانے کے لیے روکا ۔ اس دوران ملزم نے کوئی چیز پی لی جس سے اس کی موت ہو گئی۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ڈپٹی کمشنر سانبہ سورم چند شرما نے مجسٹریل انکوائری کا حکم جاری کرتے ہوئے ایک ہفتے میں رپورٹ طلب کی ہے۔ راج کمار ساکن سیری، تحصیل نوشہرہ راجوری کپڑے کا تاجر تھا۔ پولیس کلو ہماچل پردیش میں پیسوں کے لین دین کے معاملے کی تحقیقات کر رہی تھی۔ اس سلسلے میں کولّو تھانہ کے اے ایس آئی کی سربراہی میں ٹیم نوشہرہ سے کپڑے کے تاجر کو لے جا رہی تھی۔منگل کو پولیس کی ایک ٹیم سانبہ میں ایک ڈھابے پر کھانا کھانے کے لیے رکی۔ بتایا جا رہا ہے کہ اسی دوران راج کمار نے اپنی جیب سے کوئی زہریلی چیز نکال کر نگل لی۔ سانبہ کے مانسر موڑ پر ان کی حالت خراب ہونے لگی۔ پولیس اسے فوری طور پر ضلع اسپتال لے آئی، جہاں ابتدائی طبی امداد کے بعد اسے جموں لایا گیا، لیکن اس کی موت ہوگئی۔