راجوری اور پونچھ میں خواتین کے عالمی دن کی مناسبت سے کئی مقامات پر تقریبات کا اہتمام

پونچھ+راجوری//خطہ پیر پنچال کے دونوں سرحدی اضلاع میں عالمی یوم خواتین کی مناسبت سے متعدد تقریبات منعقد کی گئیں ۔دونوں اضلاع کے سرکاری سکولوں کیساتھ ساتھ دیگر مقامات پر انتظامیہ کیساتھ ساتھ فلاحی تنظیموں کی جانب سے پروگرام منعقد کئے گئے تھے ۔سرحدی ضلع پونچھ میں خواتین کا عالمی دن منایا گیا۔ اس سلسلہ میں ضلع پونچھ کے مختلف مقامات پر تقریبات منعقد کی گئی ۔گورنمنٹ ڈگری کالج سرنکوٹ میں خواتین کا عالمی دن پر خواتین کی ترقی کی کمیٹی نے ڈگری کالج کے شعبہ سوشیالوجی اور ایلومنائی ایسوسی ایشن کے اشتراک سے ایک توسیعی لیکچر کا انعقاد کیا گیا۔ ایس ڈی ایم سرنکوٹ نعیم النساء بھٹی اس پروگرام کی مہمان خصوصی تھیں۔ پروفیسر خلیق احمد قاضی ایچ او ڈی سوشیالوجی نے اس موضوع پر تفصیلی لیکچر دیا۔سمپوزیم میں تمام سمسٹرز کے طلباء نے شرکت کی۔ جج کے فرائض ڈاکٹر خلیل ریشی، پروفیسر عافیہ زمان اور ڈاکٹر اشفاق احمد نے انجام دیئے۔ شاہ زیب احمد نے پہلی، دوسری پوزیشن زاہد اقبال نے اور تیسری پوزیشن سمسٹر 5ویں کے محمد قاسم نے حاصل کی۔ڈاکٹر مسرت جبین کنوینر ویمن ڈیولپمنٹ سیل نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا اور کالج کے پرنسپل ڈاکٹر جسبیر سنگھ نے صدارتی خطبہ دیا۔پروگرام کا اختتام ایلومنائی ایسوسی ایشن کے ممبر محمد عبداللہ نے شکریہ کیا۔ ماڈل ہائر سیکنڈری سکول ساوجیاں پونچھ میں بھی خواتین کا عالمی دن منانے کے لیے ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا۔ پروگرام کی صدارت انور خان پرنسپل ماڈل ہائر سیکنڈری سکول ساوجیاں نے کی۔ تمام سٹاف ممبران اور 150 طلباء نے پروگرام میں حصہ لیا۔ اس موقع پر معاشرے میں خواتین کا کردار کے عنوان پر سیمینار کا انعقاد کیا گیا۔ اس سیمینار میں پانچ طلباء اور تین اساتذہ نے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ اس موقع پر خطاب کرنے والوں میں فردوس انجم لیکچرر، جیوتی جموال ٹیچر اور رشمی سودن ٹیچر شامل تھیں۔ تقریب سے پرنسپل ماڈل ہائر سیکنڈری سکول ساوجیاں انور خان نے خطاب کرتے ہوئے دنیا کی ان نامور خواتین کا تذکرہ کیا جنہوں نے اپنی کاوشوں سے معاشرے میں ایک مثالی تبدیلی لائی ہے۔ انہوں نے طالبات پر زور دیا کہ وہ صنفی تعصب کو دور کرکے اپنی قابلیت کو ثابت کریں اور ایک پائیدار معاشرے کے لیے اپنا حصہ ڈالیں۔پونچھ بریگیڈنے سرحدی گائوں بگیال دھرا کے سلائی اور ٹیلرنگ کورس سینٹر میں دو ماہ کے سلائی اور ٹیلرنگ کورس کا افتتاح کیا  جس کا مقصدیہ مقامی خواتین کو بااختیار بنانا اور انہیں خود مختار بنانے میں مدد فراہم کرنا ہے۔افتتاحی تقریب میں کل 25 خواتین اور پنچایت اور گاؤں کے سربراہوں نے شرکت کی۔ فوج کی جانب سے یہ سلسلہ شروع کرنے کا  دوسرا مقصد فوج اور عوام کے درمیان دوستی اور تعاون کو بڑھانے اور سرحدی دیہات کی خواتین کے سماجی معیار کو بلند کرنا ہے۔پونچھ کی تحصیل منڈی میں بھی متعدد تقاریب کا انعقاد عمل میں لایا گیا تھا ۔اسی طرح مینڈھر سب ڈویژن کے متعدد سرکاری سکولو ں میں پروگرام منعقد کئے گئے ۔سرحدی ضلع راجوری کے نوشہرہ ،منجا کوٹ ،راجوری ،تھنہ منڈی کیساتھ ساتھ کوٹرنکہ سب ڈویژن میں عالمی یوم خواتین کی مناسبت سے ایک تقریب کا انعقاد کیا گیا ۔اس سلسلہ میں انٹر نیشنل سکول منجا کوٹ میں ایک تقریب کا اہتمام کیا گیا جس کے دوران سماج کی تعمیر و ترقی میں خواتین کے رول پر تفصیلی روشنی ڈالی گئی ۔آزادی کے امرت مہااتسو کے زیراہتمام گورنمنٹ ڈگری کالج تھنہ منڈی کے ویمن ڈیو لپمنٹ سیل نے ’پائیدار کل کیلئے آج صنفی مساوات‘کے عنوان پر سمپوزیم کا انعقاد کرکے خواتین کا عالمی دن منایا۔ پروگرام کا انعقاد کالج کے پرنسپل پروفیسر (ڈاکٹر) جاوید احمد قاضی کی سرپرستی میں کیا گیا۔ رسمی خطبہ پروفیسر راحیلہ مشتاق نے دیا۔شعبہ ماحولیات کے سربراہ پروفیسر نوین شرما، شعبہ اسلامک اسٹڈیز کے سربراہ پروفیسر مدثر مجید اور شعبہ اردو ڈاکٹر شوکت علی نے پروگرام میں مصنفین کے فرائض انجام دئیے۔ اس موقع پر پروفیسر مدثر مجید نے بھی خطاب کیا اور گھریلو تشدد اور صنفی تعصب کی لعنت پر روشنی ڈالی۔ڈاکٹر الطاف احمد شعبہ کیمسٹری، پروفیسر طاہر ندیم،پروفیسر فاطمہ بی شعبہ سیاسیات، ڈاکٹر خالد حسین شعبہ اردو، ڈاکٹر عرفان سرویل شعبہ تاریخ، دیویا مہاجن شعبہ کمپیوٹر ایپلی کیشن کے علاوہ کالج انتظامیہ اور طلباء بھی موجود تھے۔ پروگرام کی کارروائی پروفیسر فاطمہ قاضی نے ترتیب دی۔ اس پروگرام میں صوبیہ کوثر، عشرت جاوید اور رجب الصدیق کو بالترتیب پہلا دوسرا اور تیسرا مقام حاصل ہوا۔اسی طرح نوشہرہ سب ڈویژن کے گور نمنٹ مڈل سکول پنڈ ناریاں میں خواتین کے عالمی دن کی مناسبت سے ایک تقریب کااہتمام کیا جس کے دوران سماج میں خواتین کیساتھ ساتھ حکومت کی جانب سے خواتین کی فلاح و بہبود کیلئے اٹھائے جارہے اقدامات پر تفصیلی روشنی ڈالی گئی ۔