دیہی ترقی محکمہ کا ایگزیکٹیو انجینئر اینٹی کرپشن بیورو کے ہتھے چڑھ گیا

بانہال // اینٹی کرپشن بیورو یا اے سی بی جموں نے محکمہ دیہی ترقی رام بن میں تعینات ایگزیکٹیو انجینئر کورشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں دھر دبوچ کر سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا۔ اینٹی کرپشن بیورو کے ترجمان نے بتایا کہ ایک شہری نے بیورو میں تحریری طور پر شکایت درج کی کہ محکمہ دیہی ترقی رام بن میں تعینات ایگزیکٹیو انجینئرمنریگا کے تحت کئے گئے کام کی واجب الادا رقم واگزار کرنے کی خاطر پانچ ہزار روپے کی رشوت طلب کر رہا ہے۔ انہوںنے کہاکہ اینٹی کرپشن بیور و نے جال بچھایا جس دوران ایگزیکٹیو انجینئر مدن لال کو سائل سے چار ہزار روپے کی رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں دبوچ کر موقع پر ہی گرفتار کیا گیا۔ انہوںنے کہاکہ مذکورہ آفیسر کے ہائشی مکان پر بھی چھاپہ ڈال کر وہاں تلاشی لی گئی ۔ بیورو کے مطابق ااس سلسلے  میں باضابط طور پر ایک مقدمہ درج کرکے مزید تحقیقات شروع کی گئی ہے ۔قابل ذکر ہے کہ جمعرات کی دوپہر بعد قریب تین بجے ایگزیکٹیو انجینئر محکمہ دیہی ترقی رام بن کے دفتر پر چھاپہ مارا گیا اورکاروائی کا سلسہ شام تک جاری تھا۔ جانکار زرائع نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ ایک پنچایتی نمائندہ محمد امین گیری پنچ وارڈ نمبر تین بنکوٹ بانہال کی قریب دو لاکھ روپئے کی ایک بل پر دستخط کرنے کیلئے ایگزیکٹیو انجینئر محکمہ دیہی ترقی رام بن مدن لعل چنڈیال پچھلے کئی روز سے مبینہ طور پر پانچ فیصدی کمیشن کی مانگ کر رہا تھا اورپنچ کی طرف سے ایم جی نریگا کے تحت فٹ پاتھ اور ٹائیل کے کام کی یہ دو بلیں ایگزیکٹیو انجینئر محکمہ دیہی ترقی رام بن کو مبینہ طور پر کمیشن نہ دینے کی وجہ سے پچھلے کئی روزسے پاس ہی نہیں کی جارہی تھیں۔ انہوں نے کہا کہ مذکورہ پنچ محمد امین گیری نے یہ بدھ کے روز یہ معاملہ تحریری طور اینٹی کرپشن بیورو جموں کی نوٹس میں لایا اور انکی شکایت کے بعد ایک اینٹی کرپشن بیورو جموں سے ایک ٹیم کو تشکیل دیا گیا جنہوں نے جمعرات دن کے قریب تین بجے ا یگزیکٹیو انجینئر مدن لال کے دفتر پر چھاپہ مارا اور اے سی بی کی یہ چھاپہ مار اور تلاش کاروائی شام دیر تک جاری تھی۔ اے سی بی کی کاروائی کی زد میں ا ٓنے والے ایگزیکٹیو انجینئر مدن لال چنڈیال کی مدت ملازمت آئندہ سال ختم ہورہی ہے۔