دنیا میں کورونا کی دہشت برقرار | متاثرین کی تعداد 12.71 کروڑ سے متجاوز

واشنگٹن//یواین آئی// دنیا میں کورونا وائرس (کووڈ ۔19) سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 12کروڑ71 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے اور اس وبا سے 27.84 لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک ہو چکے ہیں ۔ امریکہ کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کے سینٹر فار سائنس اینڈ انجینئرنگ (سی ایس ایس ای) کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق دنیا کے 192 ممالک میں کورونا متاثرین کی مجموعی تعداد بڑھ کر 12 کروڑ 71 لاکھ 93 ہزار 668 ہوگئی ہے ، جبکہ اس وائرس سے ہوئی ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 27 لاکھ 84 ہزار 153 ہوگئی۔ وہیں سات کروڑ 21 لاکھ 26 ہزار 719 افراد شفایاب ہو چکے ہیں۔عالمی طاقت تصور کئے جانے والے امریکہ میں کورونا وائرس کا قہر مسلسل جاری ہے او ر کورونا متاثرین کی تعداد 3 کرور سے تجاوز کر گئی ہے ۔ ملک میں متاثرین کی تعداد تین کروڑ دو لاکھ 62 ہزار 380 ہو گئی ہے ، جبکہ 5 لاکھ 49 ہزار 335 مریض فوت ہو گئے ہیں ۔ دنیا میں ایک کروڑ سے زیادہ کیسز والے تین ممالک میں شامل برازیل دوسرے نمبر پر ہے ۔ جہاں اب تک سوا کروڑ سے زیادہ یعنی ایک کروڑ 25 لاکھ 34 ہزار 668 فراد اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور تین لاکھ 12 ہزار 206 مریض ہلاک ہو چکے ہیں ۔ہندوستان کی کئی ریاستوں میں کورونا کیسز کے تیز رفتار سے بڑھ رہے ہیں اور یہ دنیا میں تیسرے نمبر پر مستحکم ہے ۔ سرفہرست تین ممالک کے بعد انفیکشن سے سب سے زیادہ متاثرہ ممالک میں فرانس چوتھے نمبر پر پہنچ گیا ہے ۔ فرانس میں اب تک 46.06 لاکھ سے زیادہ افراد کورونا سے متاثر ہوچکے ہیں ، جبکہ 94754 مریض فوت ہو گئے ہیں ۔ اس کے بعد روس میں 44.69 لاکھ سے زیادہ افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور 96123 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔برطانیہ میں کورونا متاثرین کی مجموعی تعداد 43.47 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے اور 126834 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ اٹلی میں کورونا متاثرین کی تعداد 35.32 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے اور 107933 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ اسپین میں اب تک 32.55 لاکھ سے زیادہ افراد اس وبا سے متاثر ہوچکے ہیں اور 75010 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ترکی میں اب تک 32.08 لاکھ سے زیادہ افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوچکے ہیں۔
 
 

پاکستانی صدر عارف علوی بھی کورونا کا شکار

اسلام آباد // پاکستان کے صدر ڈاکٹر عارف علوی نے ٹوئٹ کرکے بتایا کہ ان کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ کورونا ویکسین کی ایک ڈوز لے چکے ہیں اور دوسری ڈوز ایک ہفتے بعد لگنی تھی جس کے بعد اینٹی باڈیز بننا شروع ہوتی ہیں۔انہوں نے احتیاطی تدابیر اپنانے کی اپیل کی اور کہاکہ دعا ہے کہ اللہ کورونا کے تمام متاثرین پر رحم فرمائے۔انڈس اسپتال کے سربراہ ڈاکٹر عبدالباری کے مطابق ویکسین کی دوسری ڈوز لگنے کے 2 سے 3 ہفتوں کے بعد اینٹی باڈیز بنتی ہیں، اسی لیے چینی ویکیسین کی دو ڈوز لگائی جاتی ہیں تاکہ اینٹی باڈیز زیادہ بنیں۔خیال رہے کہ وزیراعظم عمران خان میں بھی کورونا کی ویکسین لگوانے کے بعد مہلک وائرس کی تشخیص ہوئی تھی جس کے بعد سے وہ بھی قرنطینہ میں ہیں۔
 
 
 

برطانیہ: کورونا پابندیوں میں نرمی

لنچن //انگلینڈ میں تین ماہ بعد کورونا پابندیوں میں نرمی کا اعلان کر دیا گیا۔ برطانیہ  میں گھروں پر رہنے کے احکامات ختم اور کھلے مقامات پرکھیلوں کی اجازت دے دی گئی۔یورپ میں کیسزبڑھنے پروزیراعظم بورس جانسن کی عوام کو احتیاط کرنے کی ہدایت کی ہے۔ چند روز قبل وزیراعظم نے پابندیوں میں نرمی کا اشارہ دیا تھا اور ساتھ میں احتیاط کی اپیل کرتے ہوئے کہا تھا کہ کورونا کے ختم ہونے کوئی ڈیڈ لائن نہیں دی جا سکتی۔برطانیہ کے شاہی خاندان کی بڑی بہو اور ڈچس آف کیمبرج کیٹ مڈلٹن نے کرونا لاک ڈاؤن کے دوران کھینچی گئی تصاویر پر مبنی ایک کتاب لانچ کر دی ہے۔
 
 

ماہِ رمضان کیلئے مسجد الحرام اور مسجد نبوی کا پلان جاری |  تراویح محدود، اعتکاف اور اجتماعی افطار پر پابندی عائد

ریاض//سعودی انتظامیہ نے ماہِ رمضان کے لیے مسجد الحرام اور مسجد نبوی سے متعلق پلان جاری کردیا۔سعودی عرب میں مقدس مساجد کی انتظامیہ کے سربراہ اور امام کعبہ ڈاکٹر عبدالرحمن السدیس کا کہنا تھاکہ مسجد الحرام مکہ مکرمہ اور مسجد نبوی مدینہ منورہ میں رمضان کے دوران اجتماعی افطار اور اعتکاف پر پابندی رہے گی۔ڈاکٹر عبدالرحمن السدیس کا کنا تھاکہ اس سال مقدس مساجد کے لیے رمضان پروگرام کورونا وبا سے بچاؤ کے اصول پر تیار کیا گیا ہے اور  زائرین کورونا ایس او پیز کی پابندی کریں اور ویکسین لگوائیں جبکہ سماجی فاصلے کی پابندی کریں اورعمرہ زائرین کی صحت و سلامتی کی خاطر حفاظتی ماسک ضرور پہنیں گے۔خیال رہے مقدس مساجد کی انتظامیہ کے سربراہ نے مقدس مساجد کے لیے رمضان آپریشنل پروگرامز 1442 سے متعلق تفصیلات کا اعلان سالانہ ورچول میڈیا کانفرنس کے دوران کیا، ڈاکٹر عبدالرحمن السدیس کا کہناتھا کہ اجتماعی افطار اور اعتکاف پر پابندی جاری رہے گی، مطاف کے صحن کا ایک حصہ عمرہ زائرین کے لیے خاص ہوگا جبکہ مسجد الحرام میں 5 مصلے ہوں گے اور مشرقی صحن میں بھی نماز کے لیے صفیں قائم کی جائیں گی۔امام کعبہ ڈاکٹر عبدالرحمٰن السدیس کا مزید کہامتھا کہ مسجد الحرام کے مترجمین  زائرین کے لیے حرم گائیڈ کی سہولت فراہم کریں گے اور 23 زبانوں میں مفتیان کرام کے سامنے زائرین کے سوالات پیش کریں گے اور پھر ان کے جواب کا خلاصہ زائر کی زبان میں بیان کریں گے۔امام کعبہ کا کہنا تھا کہ مقدس مساجد کی انتظامیہ زائرین حرم کے لیے مکہ مکرمہ گورنریٹ کے تعاون سے انفرادی افطار پیکٹ فراہم کرنے کی تیاری کررہی ہے جبکہ  مسجد نبوی اس کے اندرونی و بیرونی صحنوں اوردالانوں میں کہیں بھی زائرین اور نمازیوں کو سحری پیکٹ پیش کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔حرمین الشریفین انتظامیہ کی جانب سے جاری کردہ نئے کورونا ضابطوں کے تحت طواف کے دوران خانہ کعبہ کو چھونے کی اجازت نہیں ہوگی،  مسجد الحرام میں تراویح کی نماز بھی دس رکعتوں تک محدود کردی گئی ہے اور مطاف میں نماز کی ادائیگی پر بھی پابندی ہوگی۔واضح رہے کورونا وبا کے باعث سعودی عرب کی مساجد میں رمضان المبارک کے دوران تراویح کو محدود ، اعتکاف پر پابندی اور اجتماعی افطار پارٹیوں پربھی پابندی عائد کردی گئی ہے۔امام کعبہ کا مزید کہنا تھا کہ اجلاس میں نماز عید کے حوالے سے بھی بتایا گیا ہے کہ عید کی نماز کی ادائیگی کھلے میدان میں کی جائیگی جبکہ ایس او پیز پر سختی سے عمل کیا جائے گا۔