دنگل گرل زائرہ وسیم کیساتھ چھیڑ چھاڑ

 سرینگر//وادی سے تعلق رکھنے والی اداکارہ زائرہ وسیم کیساتھ ہوائی سفرکے دوران چھیڑچھاڑکاواقعہ رونماہونے پر وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی اور عمر عبداللہ نے سخت تشویش کااظہارکرتے ہوئے ملوث شخص کیخلاف  قانونی کارروائی کی مانگ کی۔اس دوران قومی خواتین کمیشن اور ممبئی انسانی حقوق کمیشن نے اسکا سنجیدہ نوٹس لیتے ہوئے ممبئی پولیس سربراہ اور ائر لائنز حکام کو طلب کرلیا ہے۔وادی سے تعلق رکھنے والی دنگل گرل زائرہ وسیم جس نے بالی وڈ فلم ’دنگل‘ سے شہرت پائی کے ساتھ وستارا ائر لائن میں چھیڑ چھاڑ کا واقعہ پیش آیا ہے۔ یہ واقعہ اتواراورسوموارکی رات اس وقت پیش آیا ہے جب زائرہ وسیم نئی دہلی سے ممبئی جارہی تھیں۔انہوں نے چھیڑ چھاڑ کا انکشاف سماجی رابطے کی ایپ انسٹاگرام پر ایک ویڈیو میں کیا۔ مذکورہ ویڈیو میں زائرہ وسیم روتے ہوئے کہتی ہیں کہ ان کی پچھلی سیٹ پر بیٹھا ایک مسافر ان کیساتھ مسلسل چھیڑ چھاڑ کا مرتکب ہوا۔زائرہ کے بقول اس حرکت کے باوجودجہازکے عملے نے کوئی کارروائی نہیں کی اورنہ جہازمیں سفرکرنے والے دوسرے مسافروں نے ہی اُنکاساتھ دیا۔ وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی نے سماجی ویب سائٹ پرتحریرکردہ اپنے ایک ٹویٹ میں اس واقعے کودہشت پرمبنی قراردیتے ہوئے کہاکہ دوبیٹیوں کی ماں ہونے کے ناطے وہ سمجھتی ہیں کہ یہ انتہائی دہشت پھیلانے والی حرکت ہے ۔انہوں نے ملوث شخص کیخلاف قانونی کارروائی کی مانگ کرتے ہوئے یہ اُمیدظاہرکی کہ متعلقہ حکام اس واقعے کاسنجیدہ نوٹس لیکرغلط حرکت کے مرتکب شخص کیخلاف موثرکاروائی عمل میں لائیں گے ۔اس دوران سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے اداکارہ زائرہ وسیم سے پرواز میں چھیڑ چھاڑ کرنے والے مسافر کی شناخت اور اس کے خلاف قانونی کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔عمر عبداللہ نے واقعہ کے ردعمل میں مائیکرئو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ایک ٹویٹ میں کہا کہ ائر لائن وستارا کو پولیس کے ساتھ مل کر (چھیڑ چھاڑ کے مرتکب) شخص کی شناخت کرلینی چاہیے۔ اس کے خلاف کیس درج کرکے قانونی کاروائی شروع کی جانی چاہیے۔