دلی پولیس کے حوالے کیا گیا سمبل کا نوجوان

بانڈی پورہ//سمبل میں نوجوان کی پولیس کے ہاتھوں گرفتاری کے بعد نئی دہلی منتقلی پر لوگوں نے احتجاجی مظاہرے کئے ۔سوموار کی صبح مرد و خواتین کی ایک بڑی تعداد نے سمبل بانڈی پورہ شاہراہ پر دھرنا بھی دیا۔ہلال احمد بٹ ولد عبدالمجید بٹ ساکن وانی محلہ سمبل کو پولیس نے 23جنوری کو پوچھ تاچھ کی غرض سے گرفتار کرلیا۔لیکن اسکے بعد ہلال کونئی دہلی منتقل کیا گیا ۔سوموار کودہلی پولیس کے ہاتھوں گرفتار نوجوان کی رہائی کے حق میں احتجاجی مارچ نکالا گیا جس میں ٹریڈرس فیڈریشن اور سومو ایسوسی ایشن سمبل بھی شامل ہوئے۔لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے سمبل چوک سے سمبل کالونی ایس ڈی ایم آفس تک احتجاجی جلوس نکالا اور وہ نوجوان کی رہائی کا مطالبہ کررہے تھے۔ اس دوران سمبل میں مکمل ہڑتال رہی  اور ٹریفک کی نقل و حرکت مکمل طور پر معطل رہی ۔ سراپا احتجاج لوگوں اور رشتہ داروں نے کہا کہ ہلال احمدکو بلاوجہ 23 جنوری کوگھر سے اٹھا لیا گیا اور بتایا گیا کہ کچھ سوال پوچھنے کے بعد چھوڑ دیا جائے گا لیکن پانچ روز گذر گئے اور اب اسے دلی پولیس کے حوالے کیا گیا۔ٹریڈرس فیڈریشن سمبل کا کہنا ہے کہ ہلال احمد کے خلاف سمبل پولیس میں کوئی بھی کیس درج نہیں ہے اور وہ کبھی بھی کسی غر قانونی سرگرمیوں میں ملوث نہیں رہا ہے۔تاہم اسکے خلاف دلی پولیس نے کیس زیر نمبر 17/2019درج کیا ہے۔یاد رہے دلی پولیس نے ایک اور کشمیری کو بھی گرفتار کیا ہے۔