دلیپ کمار کے انتقال پر ہمہ گیر رنج وغم

نئی دہلی/یو این آئی//ہندوستان کے عظیم فنکار اور شہنشاہ جذبات کے نام سے مشہور دلیپ کمار کا98 برس کی عمر میں انتقال ہو گیا۔ ان کا علاج کر رہے ڈاکٹر جلیل پارکر نے ان کی موت کی تصدیق کی ہے۔ دلیپ کمار کافی دنوں سے علیل چل رہے تھے اور ان کا ممبئی کے ہندوجا اسپتال میں علاج چل رہا تھا۔ کچھ دن پہلے ان کے شفایاب ہونے کے بعد انہیں گھر لے جایا گیا تھا۔ تاہم ان کی طبیعت دوبارہ خراب ہو گئی اور انہیں دوبارہ اسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں کئی دن تک وہ آئی سی یو میں داخل رہے۔صدر رام ناتھ کووندد نے دلیپ کمار کے انتقال  پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ  د لیپ صاحب ہندوستان کے قلب میں ہمیشہ زندہ رہیں گے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے ٹوئٹ کرکے کہا،  ’’دلیپ کمار صاحب سینما کے لیجنڈ کے طور پر یاد کیے جائیں گے۔ وہ بے مثال مہارت کے حامل تھے، جس کی وجہ سے لوگوں نے نسل در نسل انہیں پسند کیا۔ ان کی وفات سے ہماری ثقافتی دنیا کو نقصان پہنچا ہے۔ ان کے اہل خانہ، دوستوں اور بے شمار مداحوں سے میری تعزیت۔‘‘ راہل گاندھی نے  دلیپ کمار  کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ آنے والی نسلیں بھی  انہیں یاد کیا کریں گی۔ دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے بالی ووڈ کے عظیم  اداکار دلیپ کمار کے انتقال پر تعزیتکرتے ہوئے کہا کہ  یوسف صاحب کی عمدہ اداکاری آرٹ کی دنیا کی یونیورسٹی کی طرح تھی۔ وہ ہم سب کے دلوں میں زندہ رہیں  گے۔