دفعہ 35اے اور 370ہری سنگھ کی دین: سنیل ڈمپل

  یوم پیدائش پر عام تعطیل کیلئے بھاجپا مخلص نہیں 
جموں//ویسٹ اسمبلی مومنٹ کے لیڈر سنیل ڈمپل نے جموں بند کی دھمکی دیتے ہوئے بھاجپاکی لیڈرشپ پر الزام لگایا ہے کہ بھاجپا ہری سنگھ کی یوم پیدائش پر کے روز سرکاری طورپر چھٹی کئے جانے کے وعدوںسے انحراف کر رہی ہے ۔جموں ویسٹ مومنٹ لیڈر نے مزید کہاہے بھاجپا دفعہ35 اے اوردفعہ370 کاخاتمہ کرناچاہتی ہے جو کہ ریاست جموں وکشمیر کو خصوصی اختیارات مہار اجہ ہری سنگھ کی بدولت حاصل ہے۔ انہوںنے بلدیاتی اور پنچایتی چناؤمیں بھاجپا کو سبق سکھانے کی لوگوں سے اپیل کی ہے۔ مہاراجہ ہری سنگھ کی 124ویں جینتی کے سلسلے میں اہتمام کئے گئے خصوصی پروگرام کے دوران خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے سنیل ڈمپل نے اس روز سرکاری طورپر چھٹی کئے جانے کامطالبہ کیاہے ۔ڈمپل نے مزید کہاہے کہ پارٹی ریاست میں ہندو طبقہ کو اقلیتی درجہ کا مطالبہ نہیںکررہی ہے بلکہ ڈوگرہ طبقہ سے وابستہ آخری سیکولر جمہوری اتحاد کے حکمران مہاراجہ ہری سنگھ کے روز سرکاری طورپر چھٹی کئے جانے کامطالبہ کررہی ہے جو کہ جائزہے۔ انہوں نے بھاجپا پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاہے کہ بھاجپا کبھی بھی اس روز سرکاری طورپر چھٹی کے اعلان کے حق میں نہیں تھی کیوں کہ  ریاستی اسمبلی میںبھاجپا کی پوزیشن کافی مضبوط اورمستحکم ہونے کے باوجود کبھی اس نے اس مدعے کو ایوان میں نہیںاٹھایا۔ سنیل ڈمپل نے مزید بتایاہے کہ مہاراجہ ہری سنگھ ایسے شخصیت کے حامل تھے جنہوںنے ریاست جموںوکشمیر کو خصوصی درجہ دلایاہے لہذا بھاجپا کبھی بھی اس مانگ کی حمایت نہیں کرے گی۔ انہوںنے بھاجپا کے25اسمبلی ممبران و 3ممبران پارلیمنٹ و ممبران کونسل پر ریاستی عوام پر پیچھے سے چھرا گھونپے کاالزام لگایاہے۔ انہوں نے ریاستی سرکار اورمرکزی سرکار کو آنے والے دنوں میں جموں بند کرنے کا انتباہ دیا۔