دربار مو ملازمین کے زیر تحویل رہائشی کوارٹر خالی کرنے کیلئے 21اگست تک توسیع

سرینگر//حکومت نے دربار مو ملازمین کے ذریعہ جموں اور سرینگر میں زیرتحویل رکھے گئے سرکاری رہائشی کوارٹروں کوخالی کرنے کیلئے مقررہ وقت میں 21،اگست تک توسیع کردی ۔محکمہ عمومی انتظامی کے کمشنرسیکریٹری منوج کمار دویدی کی جانب سے27جولائی کو جاری آرڈرمیں کیا گیا  ہے  کہ گزشتہ احکامات کے مطابق دربارمو سے وابستہ ملازمین کوجموں اورسرینگرمیں اُن کے زیرتحویل سرکاری رہائش گاہوںکو20 جولائی2021تک خالی کرناتھا ،اوراب یہ سرکاری رہائش گاہیںخالی کرنے کی معیاد میں 30دنوں کی توسیع کی گئی ہے ،جسکے تحت اب متعلقہ ملازمین جموں اورسر نگرمیں سرکاری رہائش گاہوں کو21اگست2021تک خالی کرسکتے ہیں ۔حکم نامہ میں تمام انتظامی محکموںنیز محکموں کے سربراہان کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ  رہائشی رہائش گاہیں خالی کرنے کیلئے تمام متعلقہ ملازمین کے حق میں 3 دن کی خصوصی آرام دہ چھٹی یا رُخصتی منظور کریں گے۔حکومتی آرڈر میں کہا گیا ہے کہ اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ جموں اور سرینگر دونوں  جگہوں پرملازمین کے حق میں بغیر پریشانی’’این ائوسی‘‘ یا کلیئرنس جاری کرنے کے لئے ایک مناسب طریقہ کار وضع کرے گا۔ 29 جون کو محکمہ اسٹیٹ نے جموں کے ساتھ ساتھ سرینگر میں بھی دربار مو ملازمین کی رہائشی الاٹمنٹ منسوخ کردی تھی اور ان سے21 دن کے اندر رہائش گاہیں خالی کرنے کو کہا تھا۔ تاہم ، ملازمین نے شکایت کی تھی کہ عمل کو مکمل کرنے کے لئے ٹائم فریم کافی نہیں ہے۔غورطلب ہے کہ 20 جون کو ، لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے اعلان کیا تھا کہ جموں وکشمیر انتظامیہ مکمل طور پر ای آفس میں منتقل ہوگئی ہے ، اور اس طرح ششمائی دربار اقدام کی 149 سالہ پرانی مشق ختم ہوگئی۔